تیل کی مسلسل گرتی قیمتیں، سعودی وزیر خارجہ نے اصل وجہ بتادی، تنقید کرنے والوں کو زوردار جواب دے دیا

تیل کی مسلسل گرتی قیمتیں، سعودی وزیر خارجہ نے اصل وجہ بتادی، تنقید کرنے ...
تیل کی مسلسل گرتی قیمتیں، سعودی وزیر خارجہ نے اصل وجہ بتادی، تنقید کرنے والوں کو زوردار جواب دے دیا

  

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک) عالمی منڈی میں تیل کی قیمت میں حیرت انگیز کمی کوایران کے خلاف سعودی حکمت عملی قرار دینے ولے ناقدین کو سعودی وزیر خارجہ نے قیمت میں کمی کی اصل وجہ بتا دی ہے، اور بے تکی باتیںچھوڑ کر اصل حقائق پر نظر ڈالنے کا مشورہ بھی دے دیا ہے۔

امریکی ٹی وی سی این این کے پروگرام سچویشن روم میں صحافی وولف بلٹزر سے گفتگو کرتے ہوئے سعودی وزیر خارجہ عادل الجبیر کا کہنا تھا کہ لوگوں کو یہ صورتحال سمجھنے کے لئے ایڈم سمتھ اور بنیادی معاشیات کی طرف جانا چاہیے۔ یہ رسد اور طلب کا معاملہ ہے۔ انہوں نے وضاحت کی کہ طلب کی نسبت رسد زیادہ ہونے سے تیل کی قیمت عالمی منڈی میں تیزی سے گررہی ہے اور اس کا تعلق سعودی ایران معاملات کے ساتھ نہیں ہے۔ انہوں نے اس الزام کو رد کیا کہ سعودی عرب ایران کو نقصان پہنچانے کے لئے تیل سستا کررہا ہے۔

عادل الجبیر کا کہنا تھا کہ آپ مارکیٹ میں اپنی مرضی کے ردوبدل نہیں کرسکتے اور ایسے اقدامات کو مسلسل جاری نہیں رکھ سکتے کیونکہ یہ انتہائی نقصان دہ ثابت ہوسکتا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ سعودی عرب مارکیٹ کو اپنے توازن کا تعین خود کرنے کا موقع فراہم کرتا ہے اور اس وقت تیل کی جو قیمتیں ہم دیکھ رہے ہیں وہ مارکیٹ کی حرکیات کا نتیجہ ہیں۔

سعودی وزیر خارجہ کا مزید کہنا تھا کہ مشرق وسطیٰ میں یہ سازشی نظریات گردش کررہے ہیں کہ یہ سب کچھ بڑی طاقتیں کررہی ہیں، جبکہ مغرب میں یہ سازشی نظریات گردش کررہے ہیں کہ تیل پیدا کرنے والی طاقتیں یہ سب کچھ کررہی ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -