سویٹزلینڈ کی 26سے زائد کمپنیاں پاکستان میں سرمایہ کاری کررہی ہیں

سویٹزلینڈ کی 26سے زائد کمپنیاں پاکستان میں سرمایہ کاری کررہی ہیں

  

لاہور(کامرس رپورٹر)سویٹزرلینڈ ایمبسی اسلام آباد کے چارج ڈی آفیئرزر وگرکل نے کہا ہے کہ سویٹزلینڈ کی 26سے زائد کمپنیاں پاکستان میں مختلف سیکٹرز میں بڑی کامیابی سے سرمایہ کاری کر رہی ہیں۔جس کیلئے دونوں ممالک کے مابین ایک تجارتی تعلقات کے فروغ کیلئے 2008ء میں بزنس کونسل کا قیام عمل میں لایا گیا تھا۔ پاکستان اور سویٹزر لینڈ کے درمیان پرانے دوستانہ تعلقات ہیں دونوں ممالک کی بزنس کمیونٹی تجارت کو فروغ دیکر نہ صرف اس تعلق کو مزید مضبوط کر سکتی ہے بلکہ دونوں ممالک کی معیشت کو بھی مستحکم کر سکتی ہے ۔پاکستانی سرمایہ کاروں کیلئے بھی سویٹزر لینڈ میں سرمایہ کاری کے بے شمار مواقع موجود ہیں ۔ضرورت اس امر کی ہے کہ معلومات کا تبادلہ کر کے زیادہ سے زیادہ سرمایہ کاری کی جائے۔ ان خیالات اظہار انہوں نے گوجرانوالہ چیمبرآف کامرس اینڈ انڈسٹری کے اراکین سے خطاب کے دوران کیا۔جبکہ اجلاس کی صدارت گوجرانوالہ چیمبر کے صدر سمیع اللہ نعیم نے کی ۔اس موقع پر اراکین مجلس عاملہ سابق صدور شیخ محمد نسیم،نعمان صلاح الدین ،بابومتیاز حسین کے علاوہ صنعتی وتجارتی تنظیموں کے نمائندوں نے شرکت کی۔

روگرگل چارج ڈی آفیئرز نے ویزا کے متعلق کہا کہ چیمبر کی سفارش پر ویزا جاری کیا جائے گا انہوں نے اراکین چیمبر کو یقین دلایا کہ حقیقی کاروباری حضرات کو ویزا کے حصول میں کسی قسم کی دشواری کا سامنا نہیں کرنا پڑے گا۔کسی کاروباری حضرات کو سویٹزرلینڈ میں سرمایہ کاری کے متعلق معلومات درکار ہے تو ایمبیسی سے رابطہ کریں ہم آپ کو مکمل راہنمائی فراہم کریں گے۔قبل ازیں چیمبر کے صدر سمیع اللہ نعیم نے معزز مہمان کو سپاسنامہ پیش کرتے ہوئے گوجرانوالہ کی صنعتی اہمیت کے بارے میں روشنی ڈالی اور کہا کہ گوجرانوالہ کی بزنس کمیونٹی بے شمار چیلنجز کے باوجود عالمی منڈی میں اپنا نام برقرار رکھے ہوئے ہے جس کی وجہ یہاں کے ہنرمندوں کی بنائی جانیوالی مصنوعات کی کوالٹی ہے ۔جس پر معزز مہمان نے اتفاق کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس میں کوئی شک نہیں کہ گوجرانوالہ صنعتی لحاظ سے پاکستان کا اہم شہر ہے اوریہاں کے ہنرمند بھی قابل تعریف ہیں

مزید :

کامرس -