حکومت لوڈشیڈنگ ختم کرنے کا وعدہ پورا نہ کر سکی،پی پی انسانی حقوق ونگ

حکومت لوڈشیڈنگ ختم کرنے کا وعدہ پورا نہ کر سکی،پی پی انسانی حقوق ونگ

  

لاہور( نمائندہ خصوصی) پیپلز پارٹی انسانی حقوق ونگ لاہور کے نائب صدر میاں راشد کی رہائش گاہ پر اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے لاہور کے صدر نصیر احمد ، شیخ علی سعید، عبدالکریم میو، یامین خان آزاد، اختر شاہ اور ناصر خان مامو نے کہا کہ مسلم لیگ ن کی حکومت نے اقتدار میں آنے سے پہلے الیکشن میں قوم سے وعدہ کیا تھا کہ وہ چھ ماہ میں بجلی کا بحران حل کر دیں گے لیکن یہ وعدہ بھی دوسرے وعدوں کی طرح جھوٹ ثابت ہوا مسلم لیگ ن نے بلند بانگ دعوؤں کے باوجود ایک یونٹ بجلی بھی پیدا نہ کی نندی پور پاور پروجیکٹ جس کی لاگت اٹھارہ ارب روپے تھی اس کو بڑھا کر پچاس ارب روپے سے اوپر لے جایا گیا لیکن پھر بھی بجلی پیدا نہ ہو سکی مسلم لیگ ن کی حکومت نے بجلی پیدا کرنے کے لیے جو منصوبے شروع کیے ہیں وہ سب کاغذی شیر ثابت ہوئے ہیں اربوں روپے ان منصوبوں کی تشہیر پر خرچ کر دیئے گئے ہیں لیکن ابھی تک ان منصوبوں پر عمل درآمد نہ ہو سکا ایک ماہ کے دوران تیسرا بڑا بجلی کا بریک ڈاؤن ہو چکا ہے وفاقی وزیر بجلی و پانی اوروفاقی وزیر مملکت بجلی و پانی کے درمیان واپڈا کے اختیارات کی تقسیم اور نا اتفاقی کی سزا پوری قوم بھگت رہی ہے خواجہ آصف کے پاس دو وزارتیں ہونے کی وجہ سے نہ تو وہ ملک کا دفاع کر پا رہے ہیں اور نہ ہی ملک میں پانی و بجلی ہے۔ توانائی کے شدید بحران نے ملک کی معیشت کو تباہ کر دیا ہے ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -