افغان خفیہ ایجنسی کے سابق چیف نے بھارتی قونصلیٹ کے ایما ء پر باچا خان یونیورسٹی پر حملہ کرایا :ذرائع کا دعویٰ

افغان خفیہ ایجنسی کے سابق چیف نے بھارتی قونصلیٹ کے ایما ء پر باچا خان ...

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) افغانستان کی خفیہ ایجنسی این ڈی ایس کے سابق چیف نے بھارتی قونصلیٹ کی ایما ء پر حملہ کرایا،پاکستان نے باچا خان یونیورسٹی پر حملے کے ثبوت اکٹھے کرلیے۔نجی ٹی وی 92 نیوز نے ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ افغانستان کی خفیہ ایجنسی ’’ نیشنل ڈائریکٹوریٹ آف سیکیورٹی ‘‘کے سابق سربراہ رحمت اللہ نبیل جو کہ افغان صدر کے پاکستان کے دورے پر احتجاجاً مستعفی ہوگئے تھے انہوں نے چارسدہ یونیورسٹی پر حملہ کرایا ہے۔ پاکستان کو سابق این ڈی ایس چیف کے باچا خان یونیورسٹی پر حملے میں براہ راست ملوث ہونے کے ثبوت مل گئے ہیں۔ رحمت اللہ نبیل کو افغانستان میں بھارتی قونصلیٹ نے پاکستان میں حملے کیلئے ٹاسک دیا تھا جس پر انہوں نے حملے کیلئے ملا عمر منصور سے حملہ آور مانگے جبکہ معاوضہ بھی انہوں نے ہی طے کیا۔ سابق این ڈی ایس چیف افغانستا ن میں موجود کالعدم تحریک طالبان کے سربراہ ملافضل اللہ پر کافی اثرورسوخ رکھتے ہیں جبکہ ان کے بھارتی قونصلیٹ کے ساتھ بھی قریبی مراسم ہیں۔

مزید :

صفحہ اول -