سانحہ چار سدہ پولیس کی بھاری نفری کی تعلیمی اداروں میں سیکورٹی ریہرسل

سانحہ چار سدہ پولیس کی بھاری نفری کی تعلیمی اداروں میں سیکورٹی ریہرسل

  

 لاہور (وقائع نگار) چارسدہ میں باچا خان یونیورسٹی پر دہشت گردوں کے حملوں کے بعد لاہور کی بڑی جامعات سمیت اہم سرکاری عمارتوں کی سیکیورٹی ہائی الرٹ کردی گئی۔ پولیس کی بھاری نفری نے مختلف تعلیمی اداروں میں سکیورٹی ریہرسل بھی کی۔تفصیلات کے مطابق پولیس کی طرف سے الرٹ کال دی گئی تو پیروفورس اور کوئک ریسپانس فورس کی گاڑیاں پانچ سے سات منٹ کے دوران پنجاب یونیورسٹی گیٹ پر پہنچ گئیں جہاں پر ایس پی اقبال ٹاؤن محمد اقبال خان نے اہلکاروں کو دہشت گردوں سے نمٹنے کے حوالے سے ہدایات دیں۔ چار سدہ میں دہشت گردی کے بعد تعلیمی اداروں کا ایس ایم ایس الرٹ سسٹم بھی ایکٹو کر دیا گیا ہے جو ڈائریکٹ پولیس کنٹرول روم کے ساتھ منسلک ہے۔ دوسری جانب پولیس کی جانب سے صوبائی دارالحکومت میں رات بھر شہر میں سر چ آپریشن جاری رہا ،آپریشن کے دوران پولیس نے 85 مشکوک افراد کو حراست میں لیا ہے۔ گزشتہ روز سے سکیورٹی نقائص دور نہ کر نے والے سکولوں ،کالجوں کی انتظامیہ کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی، آئی جی پنجاب نے سخت ہدایات جار ی کر دی ہیں ۔پولیس ذرائع کے مطابق پنجاب بھر کے نجی وسر کاری سکولوں اور کالجوں کی انتظامیہ کو سکیورٹی نقائص کے حوالے سے پر فارماز دئے گئے کہ انہیں فوری دور کیا جائے، پولیس تمام سکولوں و کا لجوں سے آج پر فارماز واپس لے گی کہ کس نے کس حد تک سکیورٹی انتظامات مکمل کئے ہیں اور مکمل چیکنگ شروع کر دی گئی ہے۔ پولیس کی طرف سے مقررہ کی گئی گارڈز کی تعداد چیک کی جائے گی سکیورٹی کیمرے گارڈز کے پاس موجود اسلحہ خدا نخو استہ کسی بھی ہنگامی صورت میں ایمر جنسی راستے کھلے رکھیں ،نجی موبائل فو ن کمپینوں کی طرف سے دی گئی سہولت کو مد نظر رکھتے ہو ئے فوری شہر بھر میں کیسے الرٹ کیا جائے گا یہ تمام چیزیں چیک کی جارہی ہیں ایک اعلی پولیس آفیسر نے بتایا کہ سکیورٹی کے حوالے سے ہر چیز چیک کی جائے گی ۔

مزید :

علاقائی -