محکمہ جنگلات غیر قانونی قابضین سے قیمتی اراضی واگزار کروانے میں ناکام

محکمہ جنگلات غیر قانونی قابضین سے قیمتی اراضی واگزار کروانے میں ناکام

  

لاہور(عامر بٹ سے ) محکمہ جنگلات پرائیویٹ غیر قانونی قابضین سے اربوں روپے مالیت کی سرکاری اراضی واگزار کروانے میں مکمل طورپر ناکام ہوگیا۔محکمے کے اپنے ملازمین کی مبینہ ملی بھگت سے لاہور ، شیخوپورہ ، لیہ ، بہاولپور اور دیگر اضلاع میں جنگلات کی دو سو ایکڑ سے زائد سرکاری اراضی پر غیر قانونی قابضین نے اپنے پنجے گاڑھ رکھے ہیں۔ معلوم ہواہے کہ محکمہ جنگلات کو سرکاری اداروں کے ساتھ ساتھ پرائیویٹ غیر قانونی قابضین کی چیرہ دستیوں کا سامنا ہے۔ ایک طرف محکمے کی ہزاروں ایکڑ اراضی پر حساس اداروں ،بورڈآف ریونیو، آبپاشی ، زراعت ، اور دیگر محکموں نے ازخود ہی قبضہ جما رکھا ہے۔ وہیں صوبے بھر میں بہت سے پرائیویٹ افراد نے بھی اس بہتی گنگا میں ہاتھ دھوتے ہوئے محکمہ جنگلات کی ملکیت اربوں روپے مالیت کی دو سو ایکڑ سے زائد اراضی پرغیر قانونی قبضہ کررکھا ہے اور محکمے کے چھوٹے بڑے ملازمین نے اراضی واگزار رکروانے یا قبضہ مافیا کے خلاف کارروائی کی بجائے دانستاً چشم پوشی اختیار کررکھی ہے۔بعض ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ محکمے کے اپنے ہی ملازمین بھاری رقم لیکر جنگلات کی قیمتی اراضی پر غیر قانونی قبضے کرواتے ہیں اور محکمے کو قبضے کے متعلق بروقت اطلاع دینے اورآگاہ کرنے کی بجائے سب اچھا کی رپورٹ دیتے ہیں۔ذرائع کے مطابق قابضین کو مقامی پولیس اور بااثر مافیا کی حمایت حاصل ہے۔

مزید :

علاقائی -