دیوان عاشق بخاری کی اپیل مسترد،سپریم کورٹ کا این اے 153ملتان میں دوبارہ الیکشن کا حکم

دیوان عاشق بخاری کی اپیل مسترد،سپریم کورٹ کا این اے 153ملتان میں دوبارہ ...

  

اسلام آباد(اے این این) سپریم کورٹ نے جعلی ڈگری کے کیس میں این اے153ملتان میں دوبارہ انتخاب کا حکم دے دیا ہے اور اس ضمن میں مسلم لیگ(ن) کے ایم این اے دیوان عاشق بخاری کی اپیل مسترد کر دی ہے۔جمعرات کو چیف جسٹس انور ظہیر جمالی کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے3رکنی بینچ نے مسلم لیگ(ن) کے ایم این اے دیوان عاشق بخاری کی اپیل کی سماعت کی جس میں استدعا کی گئی تھی کہ ملتان کے حلقلہ این اے 153سے متعلق الیکشن ٹربیونل کے فیصلے کو کالعدم قرار دیا جائے ۔تاہم عدالت نے الیکشن ٹربیونل اور ہائی کورٹ کا فیصلہ برقرار رکھتے ہوئے این اے 153ملتان میں دوبارہ انتخابات کا حکم دے دیا اور دیوان عاشق کی درخواست مسترد کر دی۔دوران سماعت چیف جسٹس انور ظہیر جمالی نے ریمارکس دئیے کہ ایک شخص جس نے ایف اے نہیں کیا، وہ بی اے اور ایم اے کیسے کرسکتا ہے۔ جعلی ڈگری سے متعلق قانون سازی اس لئے کی گئی کے جعلی ڈگری والے پارلیمنٹ میں نہ آسکیں۔واضح رہے کہ عام انتخابات میں ن لیگ کے دیوان عاشق بخاری ایم این اے منتخب ہو ئے تھے ۔ پیپلزپارٹی کے امیدوار راناقاسم نون نے الیکشن ٹریبونل میں دیوان عاشق بخاری کے خلاف جعلی ڈگری اور اثاثہ جات چھپانے کی درخواست دی تھی۔ ٹریبونل نے درخواست پر دوبارہ انتخابات کا حکم دیا تھا۔دیوان عاشق بخاری نے ٹریبونل کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ سے رجوع کیا تھا ۔ آج سپریم کورٹ ٹریبونل کا فیصلہ برقرار رکھا

مزید :

علاقائی -