کراچی فشری کے سابق ڈائریکٹر سلیم دیدک کو حراست میں لے لیا گیا

کراچی فشری کے سابق ڈائریکٹر سلیم دیدک کو حراست میں لے لیا گیا

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)قانون نافذ کرنے والے اداروں نے ماڑی پور میں کارروائی کر کے کراچی فشری کے سابق ڈائریکٹر سلیم دیدک کو حراست میں لے لیا ہے جبکہ متعدد عہدیدار زیر زمین چلے گئے ہیں۔ذرائع کے مطابق پر گذشتہ ایک ہفتے کے دوران قانون نافذ کرنے والے اداروں نے فشری میں مافیاز کے خلاف کارروائیاں شروع کی تھیں اور احمد خان افغانی، سعید بلوچ، دل مراد بلوچ، مہر بخش، سلطان گند والا، صلاح الدین سمیت 10 افراد کو گرفتار کیا تھا۔ جنہوں نے فشری میں مالی بدعنوانی اور دہشت گردوں کی مالی معاونت کے بارے میں سنسنی خیز انکشافات کئے ہیں۔ذرائع کے مطابق زیرحراست ایک ملزم کی نشاندہی پر سرکاری ادارے نے ماڑی پور کی جاوید بحریہ سوسائٹی میں چھاپہ مارا۔ جہاں سے فشری کے سابقہ ڈائریکٹر سلیم دیدک کو حراست میں لے لیا گیا۔ جبکہ اس گروپ کے دیگر کئی سرکردہ افراد کی تلاش جاری ہے۔ جن کے بارے میں پتہ چلا ہے کہ وہ روپوش ہوگئے ہیں۔ذرائع کے مطابق گذشتہ چند ماہ کے دوران فشری میں مالی بدعنوانی کے نتیجے میں گینگ وار، بی ایل اے اور دیگر کالعدم تنظیموں کو بھاری مالی امداد دی گئی۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -