اب وقت آ گیا ،بھارت اور افغانستان سے دہشتگردی کے حوالے سے دو ٹوک بات کی جائے:پرویز خٹک

اب وقت آ گیا ،بھارت اور افغانستان سے دہشتگردی کے حوالے سے دو ٹوک بات کی ...

  

چارسدہ (بیورورپورٹ) خیبر پختون خواہ کے وزیر اعلی پر ویز خٹک نے باچا خان یونیورسٹی کے متاثرہ خاندانوں کو سانحہ اے پی ایس کے متاثرین کے برابر مراعات دینے کا اعلان کردیا ۔سیکورٹی اداروں نے جانوں پر کھیل کر بڑی تباہی ٹال دی ۔ سانحہ باچا خان یونیورسٹی کے بعد چارسدہ ہسپتال زخمیوں کو تمام طبی سہولیات فراہم کی گئی تھی ۔ خیبر پختونخواہ پولیس ایک بڑا ادارہ بن چکا ہے ۔فوج کے آنے سے پہلے ہی پولیس نے حالات پر قابو پا لیا تھا ۔ وہ چارسدہ ہسپتال میں زخمیوں کی عیادت کے بعد میڈیا سے بات چیت کررہے تھے۔ اس موقع پر سینئر صوبائی وزیر سکندر شیرپاؤ ، شاہ فرمان ، میاں جمشید اور دیگر بھی موجود تھے ۔ وزیر اعلیٰ پرویز خٹک نے کہا کہ تمام تعلیمی اداروں کو بہت پہلے سیکورٹی کے حوالے سے ہدایات جاری کئے گئے تھے کیونکہ صرف محکمہ پولیس ہر ادارے اور سکول کی حفاظت نہیں کرسکتی ۔ اداروں کی اندرونی سکیورٹی ان کی ذمہ داری ہے ۔ اب وقت آگیا ہے کہ بھارت اور افغانستان سے دو ٹوک بات کی جائے کیونکہ بہت ہوچکا اور ہم نے بڑی قربانیاں دی مزید قربانی دینے کی سکت باقی نہیں رہی ۔ اُنہوں نے باچا خان یونیورسٹی سانحہ کے شہداء اور زخٰمیوں کے متاثرہ حاندانوں کو سانحہ اے پی ایس شہداء کے متاثرہ خاندانوں کے برابر پیکج دینے کا اعلان کیا۔ اُنہوں نے کہا کہ یونیورسٹی کے اندر سیکورٹی اہلکاروں اور پولیس نے جواں مردی کا مظاہرہ کرکے بڑی تباہی ٹال دی اور فوج کے آنے سے پہلے حالات پر قابو پایا جو انتہائی قابل تحسین ہے ۔

مزید :

پشاورصفحہ اول -