افغانستان حکومت کے عدم تعاون کے باعث پورے ملک میں افغان سمیں استعمال ہو سکتی ہیں: پی ٹی اے

افغانستان حکومت کے عدم تعاون کے باعث پورے ملک میں افغان سمیں استعمال ہو سکتی ...
افغانستان حکومت کے عدم تعاون کے باعث پورے ملک میں افغان سمیں استعمال ہو سکتی ہیں: پی ٹی اے

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی(پی ٹی اے) حکام کا کہنا ہے کہ افغانستان حکومت کا تعاون حاصل نہ ہونے کے باعث افغان سمیں پورے ملک میں کہیں بھی استعمال ہوسکتی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی کا اجلاس ہوا جس میں باچا خان یونیورسٹی پر حملے میں افغان سمز کے استعمال پر سوال اٹھایا گیا کہ نیشنل ایکشن پلان کے تحت غیر ملکی سموں کا استعمال روکنے کیلئے رومنگ بند کی گئی تھی لیکن اس کے باوجود بھی سانحہ چارسدہ میں افغان سمز کیسے استعمال کی گئیں۔ذرائع کے مطابق پی ٹی اے حکام نے بے بسی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ افغان سمیں پورے ملک میں کہیں بھی استعمال ہوسکتی ہیں جس کی وجہ افغان حکام کا تعاون نہ ہونا ہے۔

حکام کا کہنا تھا کہ افغان سموں کے غیر قانونی استعمال کو روکنے کیلئے افغان حکام تعاون نہیں کررہے اور افغان حکومت رومنگ کے معاملے پر ڈیڑھ سال سے خاموش ہے۔حکام کے مطابق اس حوالے سے افغان حکومت کو خط بھی لکھے گئے ہیں اور 2014ءمیں ایک معاہدہ بھی تجویز کیا گیا تھا لیکن ابھی تک اس کا جواب نہیں آیا۔

مزید :

اسلام آباد -