راہداری منصوبہ پورے خطے کیلئے اقتصادی انقلاب کا حامل ہے،جدید، ترقی پسند اور روشن خیال پاکستان بنانا چاہتے ہیں : وزیر اعظم نواز شریف

راہداری منصوبہ پورے خطے کیلئے اقتصادی انقلاب کا حامل ہے،جدید، ترقی پسند اور ...
راہداری منصوبہ پورے خطے کیلئے اقتصادی انقلاب کا حامل ہے،جدید، ترقی پسند اور روشن خیال پاکستان بنانا چاہتے ہیں : وزیر اعظم نواز شریف

  

ڈیووس (مانیٹرنگ ڈیسک) وزیراعظم نوازشریف نے کہا ہے کہ پاک چین اقتصادی راہداری منصوبہ محض ایک راستہ نہیں بلکہ پورے خطے کیلئے اقتصادی انقلاب کا حامل ہے اور اس سے علاقائی ممالک کی اقتصادیات کو تقویت ملے گی۔انہوں نے کہا  کہ ہمارا وژن ایک ایسا پاکستان ہے جو تاجر دوستانہ ہو جہاں غیر ملکی سرمایہ کار خود کو محفوظ تصور کریں اور ایسا پاکستان جو جدید، ترقی پسند اور روشن خیال ہو۔

 عالمی اقتصادی فورم کے موقع پرسٹینڈرڈ چارٹرڈ کے گروپ چیف ایگزیکٹو بل ونٹرز اور سرمایہ کاروں کے ایک  بڑے گروپ سے بات چیت کرتے ہوئے وزیر اعظم نواز شریف نے کہا کہ ملک کے غیر ملکی زرمبادلہ کے ذخائر بلند ترین سطح پر ہیں اور سرمایہ کاروں کے اعتماد اور مضبوط معیشت کی بناءپر یہ تیزی سے بڑھ رہے ہیں۔انہوں نے سوئس اور بین الاقوامی سرمایہ کاروں کو پاکستان کے توانائی، ٹیلی کام، انفراسٹرکچر اور اربن ڈویلپمنٹ، ایگرو انڈسٹری، ٹیکسٹائل کے شعبوں میں سرمایہ کاری کی دعوت دیتےہوئے کہا کہ پاکستان میں عالمی سرمایہ کاری کے بہترین مواقع ہیں۔

وزیر اعظم نواز شریف سے ملاقات کرتے ہوئے سٹینڈرڈ چارٹرڈ کے گروپ چیف ایگزیکٹو  بل ونٹرز نے کہا کہ پاک چین اقتصادی راہداری سے بینکاری کے شعبے کو رغبت ملے گی کیونکہ منصوبے کے دوسرے مرحلے کے آغاز سے کئی صنعتی اور اقتصادی زونز بھی قائم ہونگے۔ انہوں نے کہا کہ ان کا بینک اس ضمن میں پہلے ہی کام کا آغاز کر چکا ہے۔ وزیراعظم نوازشریف نے کہا کہ موجودہ حکومت نجی شعبے اور قومی معیشت کے فروغ میں اس کے کردار پر پختہ یقین رکھتی ہے، ہم آزاد اقتصادی نظام کے ذریعے نجی شعبے کو سہولت دے رہے ہیں۔بل ونٹرز سے گفتگو کرتے ہوئے  وزیراعظم نے کہا کہ ملک کے غیر ملکی زرمبادلہ کے ذخائر بلند ترین سطح پر ہیں اور سرمایہ کاروں کے اعتماد اور مضبوط معیشت کی بناءپر یہ تیزی سے بڑھ رہے ہیں۔ بل ونٹرز نے کہا کہ ان کا بینک پاکستان میں معیشت کے بارے میں نہایت مثبت سوچ رکھتا ہے جہاں سرمایہ کاری بڑھ رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سٹینڈرڈ چارٹر بینک غیر ملکی سرمائے کیلئے پاکستان میں ایک سب سے بڑا ذریعہ ہے ۔ پاکستان کی معیشت میں بہتر رجحانات کے پیش نظر وہ پاکستان میں اپنے کاروبار کو دگنا کرنے کے خواہاں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی معیشت کی تیز تر نمو غیر ملکی سرمایہ کاروں کیلئے ایک بہت بڑی کشش ہے۔ ان کا بینک بجلی، بنیادی ڈھانچے، پی آئی اے اور دیگر معاشی شعبوں میں سرمایہ کاری کر رہا ہے۔ بل ونٹرز نے کہا کہ پاکستان غیر ملکی سرمایہ کاروں اور بینکنگ شعبے کیلئے سرگرم کاروباری مواقع پیش کر رہا ہے۔ اس سے قبل وزیر اعظم نواز شریف نے   سوئس اور غیر ملکی  سرمایہ کاروں کو پاکستان میں  شراکت داروں کی حیثیت سے  سرمایہ کاری کی دعوت دیتے ہوئے کہا کہ ہمارا وژن ایک ایسا پاکستان ہے جو تاجر دوستانہ ہو ، جہاں غیر ملکی سرمایہ کار خود کو محفوظ تصور کریں اور ایسا پاکستان جو جدید، ترقی پسند اور روشن خیال ہو۔ انہوں نے یقین دلایا کہ میری تاجر دوستانہ حکومت پاکستان میں انہیں تجارتی سرگرمیوں میں ہر ممکن امداد فراہم کرے گی۔ وزیراعظم نے سرمایہ کاروں کے ساتھ ملک میں بہتر ہوتی داخلی سلامتی کی صورتحال اور شاندار معاشی اشاریوں پر بھی تبادلہ خیال کیا۔ وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان میں سرمایہ کاری کی مراعات متنوع ہیں اور تاجر دوستانہ ہیں ، ہمارا بنیادی مقصد سرمایہ کاری کے بہاﺅ کےلئے سازگار فضاءقائم کرنا ہے۔ ہم ایک آزادانہ سرمایہ کار پالیسی پیش کرتے ہیں جس میں 100 فیصد ایکویٹی ملکیت، سرمایہ کی مکمل واپسی، ٹیکسوں میں چھوٹ اور مشینری اور خام کی درآمد پر کسٹم ڈیوٹی میں مراعات شامل ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم مقامی شراکت داروں اور مشترکہ مارکیٹنگ انتظامات کے ساتھ مشترکہ پیداوار اور مشترکہ منصوبوں کے امکانات کی پیشکش کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ خطہ میں ٹیکس کا نظام سب سے کم ترین ہے اور ایک بڑے مربوط ٹیکس ادائیگی یونٹ کے ذریعے ٹیکس وصول ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ خصوصی تجارت کے لئے ٹیکس چھوٹ سمیت متعدد ٹیکس مراعات موجود ہیں۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -