موسمیاتی تبدیلیوں کے مطابق نئی منافع بخش فصلوں کا فروغ

موسمیاتی تبدیلیوں کے مطابق نئی منافع بخش فصلوں کا فروغ

  

لاہور(پ ر)محکمہ زراعت نے مورنگا کی کاشت میں اضافہ کے لئے مہم شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے اس حوالے سے پتوکی میں سمینارز کا انعقاد کیا گیا جسں میں محمد محمود، سیکرٹری زراعت پنجاب نے خصوصی شرکت کی۔اس موقع پرماہرین نے سیکرٹری زراعت پنجاب کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ مورنگا (سوہانجنا) دنیا میں ایک کرشماتی پودے کے طور پر جانا جاتا ہے ۔اسکا استعمال بیماریوں سے نجات کا زریعہ ہے اور اس کے تیل زیتون کے تیل جیسی افادیت رکھتا ہے۔کاشتکار سوہانجنا کی کاشت کر کے بھرپور منافع کما سکتے ہیں ۔مورنگا نہ صرف زمین کی زرخیزی میں اضافے کا باعث بنتا ہے بلکہ یہ جانوروں کے چارہ کے طور پر بھی استعمال ہوسکتا ہے۔، بلڈپریشر، کولیسٹرل، جوڑوں اورہڈیوں کے درد میں مورنگا کا استعمال مفید ہے۔

مورنگاکے حصہ میں غذائی اور طبعی اجزاء پائے جاتے ہیں،مورنگا ( سوہانجنا) پتوں میں ددوھ سے زیادہ دوگنا پروٹین پایا جاتا ہے ، مورنگاانسان کو کئی قسم کے وٹامن فراہم کرنے کا اہم ذریعہ ہے، مورنگا کے پتوں کا نچوڑ فصلوں کے لئے ایک عمدہ قسم گروتھ ریگولیٹر ہے، مورنگا کا درخت اگر فروری اور مارچ میں کاشت کیا ہوتو ایک سال بعد ہی بیج دینے لگتا ہے اس کے بیجوں سے عمدہ قسم کا شفاف تیل حاصل ہوتا ہے،یہ تیل معیار میں بہت عمدہ اور زیتون کے تیل کے برابر ہوتا ہے اور اسے کھانے کے تیل کے طور پر استعمال کیا جاسکتا ہے۔اس موقع پر سیکرٹری زراعت پنجاب نے کہا کہ محکمہ زراعت پنجاب موسمیاتی تبدیلیوں کے مطابق نئی منافع بخش فصلوں کی کاشت کو فروغ دے رہا ہے اور کاشتکاروں کی فلاح کیلئے ہر اس اقدام کی تائید کرتا ہے جس سے کاشتکاروں کی آمدن میں اضافہ کیا جا سکے۔مورنگا کی کاشت سے کاشتکار کم وقت میں زیادہ نفع کما سکتے ہیں اور یہ خوردنی تیل کے طور پر بھی استعمال کیا جا سکتا ہے۔اس موقع پر سیکرٹری زراعت نے سمینار میں شریک ماہرین کو ہدایت کی کہ مورنگا کے فروغ کیلئے کسانوں میں شعوری مہم شروع کی جائے اور اس حوالے سے کسانوں کو اس کی اہمیت اور افادیت سے آگاہ کریں۔ سیکرٹری زراعت پنجاب نے سوہانجنا کا پودا لگا کر دعابھی کی اور بعد ازاں بفیلو ریسرچ انسٹیورٹ پتوکی کا دورہ بھی کیا۔

مزید :

کامرس -