چیف جسٹس کی جانب سے جمہوریت کے تسلسل کی بات خوش آئند ہے،میاں مقصود

چیف جسٹس کی جانب سے جمہوریت کے تسلسل کی بات خوش آئند ہے،میاں مقصود

  

لاہور(پ ر) امیرجماعت اسلامی پنجاب میاں مقصود احمدنے چیف جسٹس آف پاکستان کے بیان کہ’’جمہوریت کوپامال نہیں ہونے دیں گے ‘‘کوخوش آئندقراردیتے ہوئے کہاہے کہ ایماندار اور محب وطن قیادت کافقدان ملک وقوم کاسب سے بڑامسئلہ ہے۔اگر پاکستان کو قائد اعظمؒ کے بعدبھی ان جیسے کوئی سیاسی وژن کے ساتھ ساتھ خدمت خلق کاجذبہ رکھنے والے رہنمامیسرآجاتے تو آج پاکستان کی تقدیر بدل چکی ہوتی۔انہوں نے کہاکہ چیف جسٹس سپریم کورٹ میاں ثاقب نثار کی جانب سے جمہوری عمل کے تسلسل کی بات کرناخوش آئندامر ہے۔جماعت اسلامی ملک میں جمہوریت کے تسلسل کی حامی ہے اور حکومتوں کواپنی آئینی مدت مکمل کرنے کی سوچ رکھتی ہے۔پاکستان کی تاریخ کایہ المیہ رہاہے کہ جمہوری حکومتوں سے زیادہ ڈکٹیٹروں نے ملک پرحکمرانی کی ہے۔

۔پارلیمنٹ،عدلیہ سمیت تمام اہم اداروں کااستحصال کیاجاتا رہاہے۔انہوں نے کہاکہ پاکستان تاریخ کے نازک ترین دور سے گزررہا ہے۔جمہوری قوتوں کو پنپنے کاموقع ملنا چاہئے۔ ملک،قوم اور آئین پاکستان کے ساتھ کھیلواڑ کا سلسلہ اب بند ہوناچاہئے۔عدم استحکام،سیاسی انتشار اور جمہوریت کے خلاف سازشیں ہمیشہ غیر جمہوری قوتوں کی راہ ہموارکرتی ہیں۔انہوں نے کہاکہ تمام اداروں کو اپنی آئینی حدود میں رہتے ہوئے کام کرنا ہوگا۔پریشان حال اورمصیبت زدہ عوام کو اگر بروقت انصاف کی فراہمی کو یقینی بنادیاجائے تو پاکستان میں حقیقی تبدیلی آسکتی ہے۔

نہوں نے کہاکہ بے داغ،محب وطن قیادت ناگزیر ہوچکی ہے اور عوام کو ایسی مخلص قیادت صرف اور صرف جماعت اسلامی ہی فراہم کرسکتی ہے۔جماعت اسلامی کے مختلف ادوار میں سینکڑوں نمائندے منتخب ہوکر اسمبلیوں میں پہنچے اور اپنے حلقوں میں بلاتفریق کام کیا۔الحمدللہ ہمارے کسی بھی نمائندے پر کرپشن اور اختیارات کے ناجائزاستعمال کاکوئی ایک بھی الزام نہیں۔جماعت اسلامی میں موروثیت نام کی کوئی چیز نہیں۔میاں مقصوداحمد نے مزیدکہاکہ2018کے عام انتخابات میں عوام جماعت اسلامی کو حکومت کاموقع دیں ہم شب وروزکی محنت سے ملک وقوم کی تقدیر بدل دیں گے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -