پنجاب ہائی وے نے 2017ء میں شاہرات پر 18695مقدمات درج ، 20335ملزموں کو گرفتار کیا

پنجاب ہائی وے نے 2017ء میں شاہرات پر 18695مقدمات درج ، 20335ملزموں کو گرفتار کیا

  

لاہور(خبرنگار) ایڈیشنل آئی جی پنجاب ہائی وے پٹرول امجد جاوید سلیمی نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ پنجاب ہائی وے پٹرولنگ نے سال 2017 میں نمایا ں کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے شاہرات پر جرائم پیشہ افراد کے خلاف 18695 مقدمات درج کر کے 20335 ملزمان کو گرفتار کیا۔ 946 اشتہاری مجرمان اور 161 عدالتی مفروران کو بھی گرفتار کیا۔ 423 بھولے بھٹکے گمشدہ بچوں کو ورثا کے حوالے کیا اور 49927 تجاوزات کا خاتمہ کیا۔ 819611 بغیر رجسٹریشن اور مشتبہ موٹرسائیکلوں کے خلاف کارروائی کی۔پی ایچ پی کے قیام سے قبل سال 2004 میں شاہرات پر 270 ہائی وے رابری، 206 ڈکیتیاں اور 211 گاڑیاں چھیننے کی وارداتیں ہوئیں جو کم ہوتے ہوئے سال 2017 میں بالترتیب 39 ،2 اور 6 رہ گئی ہیں،یہ سب موثر گشت کی وجہ سے ہی ممکن ہے۔پی ایچ پی منشیات اور ناجائز اسلحہ کی برآمدگی میں بھی نمایاں رول ادا کر رہی ہے۔ پچھلے برس 23 کلاشنکوفیں، 51 رائفلیں، 130 بندوقیں اور 598 پسٹل برآمد کئے ۔ سال 2017میں ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی پر 164958 ٹکٹ جاری کر کے 71995429 روپے جرمانہ عائد کیا گیا جس کی ریکوری 77 فیصد رہی جو55210447 روپے بنتے ہیں۔ واضح رہے کہ پنجاب ہائی وے پٹرول چالان کرتے وقت کسی قسم کے کاغذات ضبط نہیں کر رہی۔ سال 2017 میں 10 ریفریشر کورسز کرائے گئے جبکہ 7خصوصی مہموں کا اہتمام کیا گیا جن میں گرین ہائی ویز، دھواں چھوڑنے والی گاڑیوں کے خلاف مہم، تمباقو نوشی کے خلاف قوانین لاگو کرنے سے متعلق مہم، کم عمر ڈرائیوروں کے خلاف دو مہمیں، سپیڈ چیکنگ مہم اوور سپیڈ بسوں اور ہیوی ٹرولرز کے خلاف مہم،دھواں چھوڑنے والی گاڑیوں کے خلاف خصوصی مہم 6 نومبر 2017 سے چل رہی ہے جس میں سال کے آخر تک 1514 چالان کر کے 716874 روپے جرمانہ عائد کیا گیا ہے۔گزشتہ سال تین نئی پوسٹیں آپریشنل کی گئیں دو راجن پور میں پٹرولنگ پوسٹ شاہ والی اور کھاکرجبکہ ایک ضلع ٹوبہ ٹیک سنگھ میں پٹرولنگ پوسٹ 284/JB شامل ہے ۔

مزید :

علاقائی -