راؤ انوار اتنا ہی بہادر ہے تو اس کو بارڈر پر بھیجا جائے : سراج الحق

راؤ انوار اتنا ہی بہادر ہے تو اس کو بارڈر پر بھیجا جائے : سراج الحق

  

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک)جماعت اسلامی پاکستان کے امیر سراج الحق نے معطل ایس ایس پی ملیر راؤ انوار کو بارڈر پر بھیجنے کی تجویز دے ڈالی۔سراج الحق نے کراچی میں معطل ایس ایس پی ملیر راؤ انوار کے ہاتھوں ماورائے عدالت قتل کیے گئے نوجوان نقیب اللہ محسود کے لواحقین سے ملاقات کی اور تعزیت کا اظہار کیا۔اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سراج الحق نے سوال کیا، 'حکومت ہمیں بتائے کہ نقیب اللہ کا جرم کیا تھا؟' ان کا کہنا تھا کہ اب حکومت کو نقیب اللہ کی ہلاکت کا جواب دینا ہوگا۔امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ کراچی کا ہر شخص راؤ انوار کو قاتل کہتا ہے، جو ماورائے عدالت اور اجتماعی طور پر بھی قتل عام میں ملوث ہے، جس کے دامن پر 424 افراد کے قتل کا داغ ہے۔انہوں نے معطل ایس ایس پی پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ 'راؤ انوار اگر اتنا ہی بہادر ہے تو اس کو بارڈر پر بھیجا جائے لیکن کراچی میں مزدوروں کو گاڑیوں میں ڈالنا اور ویرانے میں قتل کرنا کہاں کی بہادری ہے؟'امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ پورے ملک میں جنگل کا قانون ہے، کوئی بھی محفوظ نہیں ہے لیکن تعداد پوری کرنے کے لیے بے گناہ افراد کو قتل کردیا جاتا ہے۔انہوں نے نقیب اللہ محسود کے قتل کی جوڈیشل انکوائری کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ جب تک واقعے کی جوڈیشل انکوائری نہیں کرائی جاتی، کسی اور پر اعتماد نہیں کریں گے۔

سراج الحق

مزید :

صفحہ آخر -