قومی اسمبلی،نگران وزیراعظم تقررکمیٹی میں خواتین کی شرکت کیلئے بل پیش

قومی اسمبلی،نگران وزیراعظم تقررکمیٹی میں خواتین کی شرکت کیلئے بل پیش

  

اسلام آباد (آن لائن) نگران وزیراعظم کی تقرری کیلئے قائم کی جانیوالی کمیٹی میں سینیٹ اور قومی اسمبلی سے ایک ایک خواتین پارلیمنٹرین کو شامل کرنے کیلئے ترمیمی بل قومی اسمبلی میں پیش کردیا گیا ہے یہ ترمیمی بل ایم کیو ایم کے اراکین قومی اسمبلی ڈاکٹر نگہت شکیل خان ‘ محمد مزمل قریشی ‘ سمن سلطانہ جعفری‘ کشور زہرا اور ساجد احمد کی جانب سے پیش یا گیا ہے بل کے مطابق نگران وزیراعظم کی تقرری کیلئے بنائی جانے والی کمیٹی میں سینیٹ اور قومی اسمبلی سے ایک ایک خاتون پارلیمنٹرین کو شامل کیا جائیگا۔ علاوہ ازیں چاروں صوبوں کے ڈویژنل ہیڈ کوارٹرز میں سپریم کورٹ سرکٹ بینچ قائم کرنے کیلئے ترمیمی بل قومی اسمبلی میں پیش کردیا گیا ہے بل خاتون رکن اسمبلی ثریا اصغر کی جانب سے پیش کیا گیا ہے ۔دریں اثناالیکٹرانک میڈیا کو اہم سیاسی و مذہبی مواد کی ا شاعت اور شہریوں کے خلاف توہین آمیز اور ذاتیات پر مبنی پراپیگنڈہ سے روکنے سے پیمرا آرڈیننس 2002 ء میم ترامیم کا بل قومی اسمبلی میں پیش کردیا گیا ہے۔ بل کے مطابق ملک کے متعدد چینلز ایسے پروگرام نشر کررہے ہیں جن میں ذاتی بغض و عناد کا اظہار کیا جاتا ہے اور انہی ذاتی ترجیحات کی بنیاد پر افراد کو نشانہ بنایا جاتا ہے۔ترمیمی بل اراکین قومی اسمبلی ڈاکٹر فوزیہ حمید‘ ایس اے اقبال قادری ‘ محبوب عالم‘ اور محمد مزمل قریشی کی جانب سے پیش کیا گیا ہے جسے متعلقہ کمیٹی کو بھجوا دیا گیا ہے۔ علاوہ ازیں معذور افرادکے حقوق کو تحفظ فراہم کرنے کا بل بھی قومی اسمبلی میں پیش کر دیا گیا ،اس کا مقصد معذور افراد کو نوکریوں کے حصول اور انہیں تما م حقوق فراہم کرنا ہے۔ بل شائستہ پرویز ملک،طاہرہ اورنگزیب اور کشور زہرا کی جانب سے پیش کیا گیا ۔

بلز پیش

مزید :

صفحہ آخر -