روس ٹیلر کی چوکوں کی ہیٹ ٹرک، نیوزی لینڈ نے پہلا ون ڈے 7 وکٹوں سے جیت لیا

روس ٹیلر کی چوکوں کی ہیٹ ٹرک، نیوزی لینڈ نے پہلا ون ڈے 7 وکٹوں سے جیت لیا
روس ٹیلر کی چوکوں کی ہیٹ ٹرک، نیوزی لینڈ نے پہلا ون ڈے 7 وکٹوں سے جیت لیا

  

ویلنگٹن (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان اور نیوزی لینڈ کے مابین کھیلے گئے پہلے ٹی ٹوئنٹی میچ میں کیویز نے 106 رنز کا مقررہ ہدف ساڑھے 15 اوورز میں حاصل کرکے شاہینوں کو عبرتناک شکست سے دوچار کردیا۔ روس ٹیلر نے یہ میچ آخری تین گیندوں پر  لگاتار 3 چوکے مار کر جتوایا۔

پاکستان اور نیوزی لینڈ کے مابین کھیلے گئے پہلے ٹی ٹوئنٹی میچ میں بھی شاہینوں کی ناقص کارکردگی کا پول کھل گیا۔ کولن منرو اور روس ٹیلر کی جارحانہ اننگز کے باعث پہلا ٹی ٹوئنٹی نیوزی لینڈ نے 7 وکٹوں سے جیت لیا۔ نیوزی لینڈ کی طرف سے 2 چھکوں اور 3 چوکوں کی مدد سے 49 رنز بنانے والے کولن منرو ٹاپ سکورر رہے جبکہ روس ٹیلر نے بھی بھرپور لاٹھی چارج کیا اور 13 گیندوں پر 22 رنز بنا کر یہ میچ جتوانے میں اہم کردار اداکیا۔  روس ٹیلر نے پاکستان کے سٹار باؤلر حسن علی کو 16 ویں اوور کی پہلی 3 گیندوں پر چوکوں کی ہیٹ ٹرک کرکے اپنی ٹیم کو تاریخی فتح سے ہمکنار کیا۔ نیوزی لینڈ نے 16ویں اوور کی تیسری گیند پر پہلا ٹی ٹوئنٹی میچ 7 وکٹوں سے جیت لیا ۔ 

پاکستان کی طرف سے رومان رئیس نے شاندار باﺅلنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے 2 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی ۔ انہوں نے اپنے پہلے اور اننگ کے دوسرے اوور میں مارٹن گپٹل کو صرف 2 رنز پر گھر بھیج دیا جبکہ اگلے ہی اوور میں انہوں نے فلپس کو 3 رنز پر کلین بولڈ کردیا۔ میچ کے گیارہویں اوور کی پہلی گیند پر شاداب خان نے ایسی پھرکی گھمائی کہ بروس 26 رنز بنا کر باؤنڈری کے پاس کیچ آؤٹ ہوگئے۔ قومی ٹیم کی طرف سے صرف 3 کھلاڑیوں کو ہی آؤٹ کیا جاسکا جس کے بعد  چراغوں میں روشنی نہ رہی۔ 

قبل ازیں پاکستان اور نیوزی لینڈ کے مابین کھیلے گئے پہلے ٹی ٹوئنٹی میچ میں شاہینوں نے ناقص کارکردگی کے اگلے پچھلے تمام ریکارڈ توڑ کر قوم کی امیدوں پر پانی پھیر دیا ۔ ٹاپ آرڈر بلے باز مکمل طور پر ناکام ہوگئے جبکہ مڈل آرڈر بھی فلاپ رہا ۔ قومی ٹیم  19 اعشاریہ 4 اوورز میں 105 رنز بناسکی ، بابر اعظم 41  اور حسن علی 23 رنز بنا کر ٹاپ سکورر رہے۔نیوزی لینڈ نے ٹاس جیت کر پہلے فیلڈنگ کا فیصلہ کیا جو کیوی ٹیم کیلئے انتہائی سود مند ثابت ہوا۔ شاہینوں کی وکٹوں کی ایسی پت جھڑ لگی کہ 9 کھلاڑی ڈبل فگر میں ہی داخل نہ ہوسکے ۔ گرین شرٹس نے ’تُو چل میں آیا‘ کے کلیے پر عمل کیا اور 2 کھلاڑی بغیر کوئی رن سکور کیے پویلین لوٹ گئے جبکہ سب سے آخر میں آنے والے رومان رئیس دوسرے اینڈ پر ہی کھڑے کھڑے واپس چلے گئے۔ قومی ٹیم نے بابر اعظم کے 41 اور حسن علی کے 23 رنز کی بدولت نیوزی لینڈ کو جیت کیلئے 106 رنز کا ہدف دیا ۔

اوپننگ جوڑی مکمل طور پر فلاپ رہی ، فخر زمان صرف 3 رنز بنا کر ساﺅتھی کا نشانہ بن گئے، دوسرے اینڈ پر کھڑے عمر امین نے بھی اپنے ساتھی کی جدائی برداشت نہ کی اور ’ میچ میں انڈہ‘ حاصل کرکے سیتھ رانس کی گیند پر وکٹ گنوا بیٹھے۔ٹاپ آرڈر سے مایوس کپتان سرفراز احمد نے حکمتِ عملی تبدیل کرتے ہوئے باﺅلر محمد نواز کو ون ڈاﺅن بھیجا لیکن یہ تجربہ میدان میں بہار نہ لاسکا اور محمد نواز بھی صرف 3 رنز بنا کر پت جھڑ کا شکار ہوگئے، انہیں ساﺅتھی نے آﺅٹ کیا۔

حارث سہیل اور کپتان سرفراز احمد کی کارکردگی بھی انتہائی مایوس کن رہی، دونوں ہی کھلاڑی یکے بعد دیگرے 9، 9 رنز بنا کر آﺅٹ ہوئے۔ سپنر شاداب خان نے بھی انڈہ حاصل کیا اور فہیم اشرف 14 گیندوںپر 7 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئے۔ حسن علی کریز پر آئے تو انہوں نے اننگ کا آغاز شاندار چھکے کے ساتھ کیا ، انہوں نے 12 گیندوں پر 3 چھکوں کی مدد سے 23 رنز سکور کیے۔ وہ لگاتار 2 چھکے مار کر تیسرے چھکے کی کوشش میں کیچ آﺅٹ ہوئے۔ فاسٹ باﺅلر محمد عامر بھی اونچا کھیلنے کے چکر میں رانس کی گیند پر ساﺅتھی کے ہاتھوں 3 رنز بنا کر کیچ آﺅٹ ہوگئے جس کے بعد رومان رئیس آئے تو وہ کوئی بھی گیند کھیلے بغیر دوسرے اینڈ پر ہی کھڑے رہے۔ بابر اعظم بھی  ایک چھکا لگانے کے بعد حسن علی کی طرح اگلے چھکے کی کوشش میں 41 رنز بنا کر کیچ آؤٹ ہوئے۔

مزید :

اہم خبریں -کھیل -Breaking News -