پنجاب یونیورسٹی ہنگامہ ، لسانی گروہ نے جمعیت کا ایونٹ سبوتاژ کرنے کیلئے سوشل میڈیا پر پلاننگ کی

پنجاب یونیورسٹی ہنگامہ ، لسانی گروہ نے جمعیت کا ایونٹ سبوتاژ کرنے کیلئے سوشل ...
پنجاب یونیورسٹی ہنگامہ ، لسانی گروہ نے جمعیت کا ایونٹ سبوتاژ کرنے کیلئے سوشل میڈیا پر پلاننگ کی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پنجاب یونیورسٹی میں اسلامی جمعیت طلبہ اور ایک لسانی گروہ میں تصادم کے باعث کلاسز منسوخ کردی گئی ہیں جبکہ پاکستان کی سب سے بڑی جامعہ میدانِ جنگ کا منظر پیش کر رہی ہے۔ اب انکشاف ہوا ہے کہ جمعیت کی جانب سے ہونے والے پائنیرز فیسٹیول کو سبوتاژ کرنے کیلئے لسانی گروہ کے طلبہ نے سوشل میڈیا پر پلاننگ کی اور فساد مچایا۔
نجی ٹی وی دنیا نیوز کے مطابق پنجاب یونیورسٹی میں سرگرم لسانی گروہ کے کچھ ارکان کی سوشل میڈیا پر ہونے والی چیٹ منظر عام پر آئی ہے جس کا جائزہ لینے سے پتا چلتا ہے کہ آج (پیر کو) جمعیت کا ایونٹ سبوتاژ کرنے کیلئے پہلے سے پوری پلاننگ کی گئی تھی۔

پنجاب یونیورسٹی میدان جنگ میں تبدیل ، جمعیت اور لسانی تنظیم کے طلبہ آمنے سامنے ، ہنگامہ آرائی، متعدد طلبہ زخمی
عزیزطوری اوراشرف خان نامی طلبا کے درمیان پائنیر فیسٹیول سبوتاژ کرنے کیلئے باقاعدہ پلاننگ ہوئی ۔ چیٹ میں ایک طالبعلم نے دوسرے سے کہا کہ ” جمعیت کچھ نہیں کرے گی ،22 جنوری کوان کاپروگرام ہے، 22 جنوری کاپروگرام کسی صورت نہیں کرنے دیں گے “۔ دوسرے طالبعلم نے کہا ” آپ کابینہ ممبرہو،فیصلہ کرو 22 جنوری کاپروگرام نہیں ہونے دینا، 50 ،60 لوگوں کی ڈیفنس فورس تیاری رکھی جائے“۔