’اتنے عرصے بعد مرد خواتین کو چھوڑ کر اس چیز سے شادی کرنے لگ جائیں گے‘ معروف سائنسدان نے اعلان کردیا، ایسی بات کہہ دی کہ مرد و خواتین سب کا منہ کھلا کا کھلا رہ جائے

’اتنے عرصے بعد مرد خواتین کو چھوڑ کر اس چیز سے شادی کرنے لگ جائیں گے‘ معروف ...
’اتنے عرصے بعد مرد خواتین کو چھوڑ کر اس چیز سے شادی کرنے لگ جائیں گے‘ معروف سائنسدان نے اعلان کردیا، ایسی بات کہہ دی کہ مرد و خواتین سب کا منہ کھلا کا کھلا رہ جائے

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) جنسی روبوٹس ٹیکنالوجی جدید سے جدید تر ہوتی جا رہی ہے اور ماہرین اسے انسانیت کے لیے سب سے بڑا خطرہ قرار دے رہے ہیں۔ اب ایک معروف سائنسدان نے اس حوالے سے ایسا دعویٰ کر دیا ہے کہ سن کر ہر کسی کا منہ حیرت سے کھلا کا کھلا رہ گیا۔ ڈیلی سٹار کی رپورٹ کے مطابق ڈیوڈ لیوی نامی سائنسدان نے اپنی کتاب ’لو اینڈ سیکس وِد روبوٹس‘ (Love and Sex with Robots)میں دعویٰ کیا ہے کہ ”2050ءتک مرد خواتین کو چھوڑ کر جنسی گڑیاﺅں سے شادی کرنے لگیں گے۔ تب تک جنسی روبوٹس کے ساتھ شادیاں قانونی بھی قرار پا چکی ہوں گی۔“
ڈیوڈ لیوی نے لکھا ہے کہ ”انسان اور روبوٹ کے درمیان جنسی تعلق کے معمول بننے کا رجحان ابھی سے جاپان میں دیکھا جا سکتا ہے۔ جنسی گڑیاﺅں کی ارزاں قیمت بھی ان کی مقبولیت میں اضافے کا سبب بن رہی ہے۔ اب جس شخص کے پاس 2ہزار پاﺅنڈ (تقریباً 3لاکھ روپے) ہے وہ جنسی گڑیا خرید کر اپنے بیڈ روم میں رکھ سکتا ہے۔وقت کے ساتھ ساتھ مرد اور جنسی روبوٹ کا تعلق ’محبت‘ میں تبدیل ہو جائے گا اور جنسی گڑیائیں خواتین کا متبادل بن جائیں گی۔ مرد خواتین کی نسبت جنسی گڑیاﺅں کے ساتھ تعلق کو زیادہ محفوظ خیال کریں گے اور خواتین کی نسبت روبوٹ جنسی گڑیا کو بیوی کے طور پر رکھنا ان کے لیے کہیں زیادہ آسان ہو گا۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -