آن لائن ٹیکسی سروس ”کریم “ نے مہاجرین کی آباد کاری کے لئے 1لاکھ ڈالرز عطیہ کر دئیے

آن لائن ٹیکسی سروس ”کریم “ نے مہاجرین کی آباد کاری کے لئے 1لاکھ ڈالرز عطیہ کر ...
آن لائن ٹیکسی سروس ”کریم “ نے مہاجرین کی آباد کاری کے لئے 1لاکھ ڈالرز عطیہ کر دئیے

  

دبئی (ڈیلی پاکستان آن لائن) ڈیجیٹل ٹیکسی سروس کریم نے اقوام متحدہ کے ادارہ برائے مہاجرین(UNHCR) کی شراکت داری سے شامی اور عراقی مہاجرین کے لئے ایک وسیع مہم کے ذریعے جمع کی گئی اپنی خطیر رقم عطیہ کرنے کا اعلان کردیا ہے۔

کریم سروس کے کو سی ای او اور سی پی او عبد اللہ الیاس کا کہنا تھا کہ ہم یہ اعلان کرتے ہوئے فخر محسوس کرتے ہیں کہ ٹیکسی سروس استعمال کرنے والے ہمارے صارفین کے عزم اور ہمارے ڈرائیورز کی محنت کی بدولت ہم نے ایک لاکھ ڈالر سے زیادہ رقم اکٹھی کی ، یہ رقم UNHCR  کار ٹائپ کے ذریعے جمع کی گئی ہے۔ ہم نے رمضان المبارک میں یہ مہم شروع کی تھی اور اس مہم کو صرف ایک ماہ کے لئے چلانا تھا ۔ ہمیں صارفین کی طرف سے حیران کن ردعمل دیکھنے کو ملا ، لوگوں نے عید کے بعد بھی اپنے عطیات دئیے۔پھر ہم نے اس مہم کو سال کے آخر تک جاری رکھنے کا فیصلہ کیا۔ یہ نہ صرف خطے کے لوگوں کی سخاوت  بلکہ ان کے دوسروں  کی مدد کرنے کے جذبے کو بھی ظاہر کرتا ہے۔

عبد اللہ الیاس کا مزید کہنا تھا کہ انہوں نے  رمضان المبارک کریم نے زیادہ سے زیادہ فنڈز اکٹھے کئے۔ یو این ایچ سی آر کار سروس ، اکانومی کار سروس ہی کی طرح ہوتی ہے، اس میں صارف کو UNHCRکے ذریعے پہلے سے طے شدہ رقم مہاجرین کی مدد کے لئے عطیہ کرنا ہوتی ہے۔ یہ سروس متحدہ عرب امارت اور سعودی عرب میں مئوثر ہے اور اس کے ذریعے صارفین کو بالترتیب3درہم اور3سعودی ریال عطیہ کرنا ہوتے  ہیں ، صارفین ڈرائیو شروع کرنے سے قبل ایک مخصوص کوڈ استعمال کرتے ہیں ، اس کے ذریعے کریم اردن میں UNCHRکو ٹرپ کا 5فیصد ادا کرتی ہے۔

عبد اللہ الیاس کے مطابق کریم کے صارفین کی جانب سے عطیہ کئے گئے فنڈز مہاجرین کے روز مرہ معمولات پر اہم اثرات مرتب کریں گے ، 1لاکھ امریکی ڈالرز کا عطیہ 89عراقی اور شامی مہاجر خاندانوں کو کفالت فراہم کرے گا، ہر خاندان میں 2سے 4افراد ہیں جبکہ اس فنڈ سے373مہاجرین مستفید ہو ں گے۔ یہ رقم لبنان اور اردن میں موجود مہاجرین کو نقد امداد کی صورت میں چھے ماہ کے لئے دی جائے گی۔ اس امداد کے ذریعے مہاجرین اپنی بنیادی ضروریات(خوراک ، صحت اور گھر) پوری کرسکیں گے۔اعداد و شمار کے مطابق شامی اور غیر شامی مہاجرین کے لئے نقد امداد انہیں مالی طور پر مستحکم کرنے اور خوراک خریدنے کے لئے استعمال کی گئی۔

مزید :

عرب دنیا -