تیل چوری سکینڈل،مافیا کیخلاف بڑا آپریشن تیاریاں مکمل نئے پرانے مقدمات کی چھان بین شروع

تیل چوری سکینڈل،مافیا کیخلاف بڑا آپریشن تیاریاں مکمل نئے پرانے مقدمات کی ...

  



مظفرگڑھ (نامہ نگار) کنفرم کرادیں پاک عرب آئل ریفائنری کی پائپ لائن سے کلمپ لگاکر تیل چوری کی بڑی وارداتوں کے اسکینڈل میں مزید اہم انکشافات کا سلسلہ جاری ہے اور خبروں کی اشاعت پر پولیس میں کھلبلی مچ گئی ہے جس پر آئل مافیا کے خلاف ضلع بھر درج مقدمات کی تفصیلات جمع کی جارہی ہے۔ جبکہ خفیہ ادارے بھی قومی خزانے کو نقصان پہنچانے والوں کے خلاف متحرک ہوگئے ہیں۔ اور آئل مافیا کے خلاف درج ہونیوالے مقدمات سمیت(بقیہ نمبر36صفحہ7پر)

انکے سرپرست پولیس افسران کے خلاف معلومات اکٹھی کرنا شروع کردی ہے۔ جبکہ ڈی پی او مظفرگڑھ نے بھی گزشتہ روز اچانک تھانہ کرمداد قریشی کا دورہ کیا اور حالیہ دنوں میں تھانے کی حدود میں پکڑے جانیوالے کلمپ کے مقدمہ کی معلومات حاصل کی اور اس مقدمہ کی تفتیش کا دائرہ کار وسیع کرتے ہوئے کاروائی کرنے کی ہدایت کی ہے غلام شبیر المعروف شبو ہمبڑ کے بارے میں ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ اس کو بچانے کے لیے کئی ریٹائرڈ اور حاضر سروس پولیس افسر متحرک ہوچکے ہیں جس کے شبو ہمبڑ کے ساتھ گہرے مراسم ہیں اور وہ اسکی بھرپور سرپرستی بھی کرتے ہیں شبو ہمبڑ کے ساتھ کاروباری شراکت داری بھی کررکھی ہے۔ آئل مافیا کا اہم کردار شبو ہمبڑ کے اس وقت مظفرگڑھ اور شیر شاہ میں پٹرول پمپ کے علاوہ درجنوں آئل ٹینکرز بھی چل رہے ہیں جبکہ شبو ہمبڑ نے آئل ٹینکرز کا کیرج بھی بنایا ہوا ہے۔ تھانہ صدر مظفرگڑھ میں چند ماہ قبل پارکو آئل ریفائنری کی پائپ لائن سے کلمپ لگاکر تیل چوری کے مقدمہ میں بھی اہم انکشافات ہوئے ہیں کہ اس وقت کے سابق ایس ایچ او تھانہ صدر مظفرگڑھ نے آئل مافیا کے اہم کرداروں کو جان بوجھ کر گرفتار نہ کیا اور مقدمہ کو خراب کرنے کے لیے اپنا کردار کیا جس پر مقدمہ میں نامزد ملزمان کی عبوری ضمانتیں بغیر گرفتاری کے کنفرم ہوگئی اور گورنمنٹ کو کروڑوں روپے کا نقصان پہنچانے والے قانون کی گرفت میں نہ آسکے جس پر اس وقت کے آر پی او ڈیرہ غازی خان شیخ عمر نے سابق ایس ایچ او کو اپنے دفتر بلواکر گرفتار کرادیا تو کئی گھنٹے کے بعد ایس ایچ او وارننگ دیکر چھوڑ دیا گیا جبکہ اس وقت کے ڈی پی او مظفرگڑھ صادق علی ڈوگر بھی اس مقدمہ میں آئل مافیا کا ساتھ دینے پر سابق ایس ایچ او پر برہم تھے۔ اور اس مقدمہ میں آئل مافیا کے ڈان غلام شبیر المعروف شبو ہمبڑ بھی نامزد ہے۔ جس کے خلاف پولیس نے آج تک کوئی کاروائی نہ کی ہے۔ آئل مافیا کے ایک اور اہم کردار غلام عباس کے بارے میں انکشاف ہوا ہے کہ وہ پارکو آئل ریفائنری سے کروڑوں روپے مالیت کے تیل چوری کے مقدمہ میں گرفتار ہوکر چالان ہوچکا ہے جس کے اس وقت ملتان اور دیگر شہروں میں اثاثے اربوں روپے بتائے جاتے ہیں جس کا نیٹ ورک جنوبی پنجاب کے کئی شہروں میں پھیلا ہوا ہے۔ اور پارکو آئل ریفائنری کی پائپ لائن سے تیل چوری کی بڑی وارداتیں کرنے کے لیے سرگرم ہے۔ جبکہ نیب کی حراست میں وعدہ معاف گواہ بن کر رہائی پانیوالے غلام شبیر کی بھی تیل چوری کی نقل و حمل تیز ہوچکی ہے جس کے نیٹ ورک میں اسکے کئی قریبی عزیز بھی شامل ہیں اور کچھ روز قبل بھی شیرشاہ میں ایک پٹرول پمپ پائپ لائن سے چوری کا تیل بھی سپلائی کرچکا ہے۔ اور آئل مافیا کا اہم کردار اور راز دار غلام شبیر ضلع راجن پور کے تھانہ عمر کوٹ میں پارکو آئل ریفائنری کی پائپ لائن سے کلمپ لگاکر تیل چوری کرتے ہوئے رنگے ہاتھوں پکڑے جانے کے بعد گرفتار بھی رہ چکا ہے اور اس مقدمہ میں اس کا ایک قریبی عزیز بھی اہم کردار تھا جس پر آج تک پولیس ہاتھ نہ ڈال سکی ہے۔ جبکہ ضلعی انتظامیہ بھی ضلع مظفرگڑھ میں قائم سینکڑوں غیرقانونی آئل ایجنسیوں کے خلاف متحرک ہوچکی ہے اور خفیہ ایجنسیوں اور سول ڈیفنس کے ہمراہ چھاپوں کا سلسلہ شروع کردیا ہے گزشتہ روز بھی تھانہ چوک قریشی کی حدود میں غیرقانونی آئل ایجنسی پر چھاپہ مارکر ٹینک، ہزاروں لیٹر تیل اور مکسنگ کا سامان برآمد کیا گیا ہے۔

تیل سکینڈلف

مزید : رائے /ملتان صفحہ آخر