ملک میں وافر ذخائر ہونے کے باوجود گندم درآمد کرنیکافیصلہ زراعت دشمنی، نواز ناجی

ملک میں وافر ذخائر ہونے کے باوجود گندم درآمد کرنیکافیصلہ زراعت دشمنی، نواز ...

  



بہاولپور(ڈسٹرکٹ رپورٹر) تہذیب سے عاری حکمران ٹولے نے پاکستان کے22 کروڑ عوام کومہنگائی، بے روزگاری اوربدامنی کی دلدل میں پھنسارکھاہے جبکہ حکومتی وزراء عوام کی پریشانیوں (بقیہ نمبر56صفحہ12پر)

دورکرنے کی بجائے ان پرپھبتیاں کسنے میں مصروف ہیں۔ یہ بات چیف ایگزیکٹو تحریک بحالی صوبہ بہاولپورمحمدنوازناجی نے تحریک بحالی صوبہ کے کارکنوں سے گفتگوکرتے ہوئے کہی انہوں نے کہاکہ آٹے کے بحران کوبھی حکمران عوام کے سرمنڈھنے میں لگے ہیں اورشیخ رشید کایہ بیان کہ نومبردسمبرسے زیادہ روٹی کھائی جاتی ہے عوام کے سینوں پرمونگ ڈالنے کے مترادف ہے انہوں نے کہاکہ سواسال کے مختصرعرصے میں حکمرانوں کی طرف سے74 کھرب کے قرضے لیناسمجھ سے بالاترہے اقتصادی رابطہ کمیٹی نے گندم کی درآمد کافیصلہ کرکے کاشتکاروں سے دشمنی کاثبوت دیاہے ملک میں وافر ذخائر ہونے کے باوجود گندم درآمد کرنے کافیصلہ زراعت دشمنی ہے جب تک درآمدشدہ گندم پاکستان آئے گی اسوقت تک ملکی فصل مارکیٹ میں آچکی ہوگی جس سے ایک نیابحران جنم لے گااورملکی کاشتکار متاثرہونگے نوازناجی نے کہاکہ چینی کی قیمت میں 5 روپے فی کلوکااضافہ اب ملک میں چینی کے بحران کی نویددے رہاہے صدرپاکستان کوآٹے کے بحران کاعلم نہ ہونالمحہ فکریہ ہے حکمرانوں کوپاکستان اوراس کے عوام سے کوئی غرض نہیں وہ صرف اپنی اے ٹی ایم مشینوں کونوازنے میں لگے ہیں اوراسی خاطرپابندی کے باوجود گندم برآمدکرنے کی اجازت دی گئی۔

نوازناجی

مزید : ملتان صفحہ آخر