پاکستان میں کوئی بھی ٹیکس نہیں دینا چاہتا، شبر زیدی

  پاکستان میں کوئی بھی ٹیکس نہیں دینا چاہتا، شبر زیدی

  



اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) چیئرمین فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) شبر زیدی نے ملک کے ٹیکس نظام کے ناکامی کی طرف جانے کا اعتراف کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک کا ٹیکس نظام درہم برہم ہے، پاکستان میں کوئی بھی ذاتی طور پر ٹیکس نہیں دینا چاہتا۔منگل کواسلام آباد میں ایک سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے شبر زیدی کا کہنا تھا کہ ٹیکسیشن کا نظام ناکامی کی طرف جا رہا ہے،ٹیکسیشن کو عوام کی مدد سے صحیح کرنا ہے اور سسٹم میں بنیادی تبدیلیاں کرنی ہیں۔چیئرمین ایف بی آر نے کہا کہ پاکستان میں ٹیکس کا زیادہ بوجھ مینو فیکچرنگ سیکٹر اٹھا رہا ہے، لوگ ٹیکس بوجھ کی وجہ سے مینو فیکچرنگ سے بھاگ رہے ہیں، ریفارم پالیسی کے مطابق ٹیکس کا بوجھ تمام سیکٹرز میں برابر بانٹا جائے گا۔واضح رہے کہ چیئرمین ایف بی آر گذشتہ 15 دنوں سے صحت کے مسائل کے سبب رخصت پر تھے اور اس حوالے سے گذشتہ روز تقریب سے خطاب میں وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ شبر زیدی پر معیشت کے حوالے سے اتنا دبا بڑھا کہ وہ بیمار ہوگئے، شکر ہے دو ہفتوں کی چھٹی کے بعد واپس آگئے ہیں۔

شبر زیدی

مزید : صفحہ اول