بائیکو ہائی سلفر فرنس آئل برآمد کرنے والی پہلی پاکستانی کمپنی بن گئی

بائیکو ہائی سلفر فرنس آئل برآمد کرنے والی پہلی پاکستانی کمپنی بن گئی

  



کراچی (اکنامک رپورٹر)پاکستان کی جدت پسند آئل کمپنی بائیکو پٹرولیم پاکستان لمیٹڈ ریفائنگ اور پٹرولیم ایکو سسٹم میں جدت لانے میں ہمیشہ آگے رہی ہے۔ جدت کو راہ ہموار کرتے ہوئے، بائیکو ہائی سلفر فرنس آئل (ایچ ایس ایف او) برآمد کرنے والی پاکستان کی پہلی کمپنی بن گئی ہے۔ یہ ملک میں فیول مکس کے ارتقاء کے ساتھ پاکستان کی آئل ریفائنریز کو درپیش دیرینہ مسائل کے حل کی طرف ایک اہم قدم ہے۔ پاکستان میں ایچ ایس ایف او (HSFO)کی مقامی سطح پر طلب میں کمی اور یکم جنوری 2020 ء سے آئی ایم او (IMO) کی منظوری کے ساتھ ہی فرنس آئل کی طلب تقریبا نہ ہونے کے برابر رہ گئی تھی۔ لیکن بائیکو کا ایچ ایس ایف او (HSFO) کی برآمد کا اقدام انڈسٹری کیلئے کچھ امیدیں بحال کرنے میں مددگار ثابت ہو سکتا ہے۔25,000 میٹرک ٹن کی پہلی کنسائنمنٹ کیماڑی بندرگاہ پر رائے میرسک نامی بحری جہاز (Roy Maersk) پر لوڈ کی جارہی ہے۔بائیکو کے سی ای او عامر عباسی نے اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ”بائیکو کا اس بات پریقین ہے کہ ہر چیلنج میں ایک موقع موجود ہوتا ہے۔ جدت ہی ایک ایساذریعہ ہے جو پاکستان کو توانائی کی پیداوار میں خود کفیل بنانے کی منزل کی طرف لے جائے گا۔ بائیکو کو پاکستان میں ایچ ایس ایف او (HSFO) برآمد کرنے والی پہلی کمپنی بننے پر خوشی ہے۔ یہ جدت کاری کے اقدامات، بائیکو کی بڑھتی ہوئی فہرست میں ایک اور اضافہ ہے۔ اس سے پہلے بائیکو پاکستان میں پہلا سنگل پوائنٹ مورنگ (SPM) نصب کر چکی ہے جوواحد تیرتی ہوئی مائع بندرگاہ ہے جس سے خام تیل اور ریفائنڈ پٹرولیم مصنوعات کی درآمد اور برآمد کیلئے استعمال کیا جاتا ہے۔“

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر