وفاق نے سندھ کے عوام کے ساتھ مسلسل غیر سنجیدہ رویہ اپنایا ہوا ہے: وزیراعلٰی

وفاق نے سندھ کے عوام کے ساتھ مسلسل غیر سنجیدہ رویہ اپنایا ہوا ہے: وزیراعلٰی

  



کراچی(اسٹاف رپورٹر)وزیر اعلی سندھ مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ مشترکہ مفادات کونسل(سی سی آئی)کے اجلاس اول تو ہوتے نہیں بالفرض ہو بھی گئے تو اسکے منٹس جاری نہیں کئے جاتے، کافی چیخ و پکار کے بعد اگر منٹس آتے ہیں تو ان میں ہیرا پھیری کردی جاتی ہے۔ وفاق نے سندھ کے عوام کے ساتھ مسلسل غیر سنجیدہ رویہ اپنایا ہوا ہے۔ میری کوشش ہے کہ ہم سندھ کے عوام کی خدمت کرتے رہیں۔ یہ بات انہوں نے منگل کو چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری کی جانب سے دھابیجی پمپنگ کمپلیکس کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ مراد علی شاہ نے کہا کہ سندھ حکومت کراچی سرکلر ریلوے(کے سی آر)کو دوبارہ سی پیک پروجیکٹس میں شامل کرانے میں کامیاب ہوگئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کراچی کو پانی کی اشد ضرورت ہے۔نئے پمپنگ اسٹیشن سے 600 ایم جی ڈی ملین گیلن روزانہ پانی کراچی کو مہیا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ ہم چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری کے شکرگزار ہیں کہ انہوں نے وقت نکال کر ہمارے منصوبوں کا افتتاح کیا۔ ایک ماہ کے دوران ہم نے چیئرمین صاحب سے تیسرے فیز کے منصوبے کا افتتاح کروایاہے، فلائی اوور اور انڈرپاسز کی کامیابی کے بعد پمپنگ اسٹیشن کا افتتاح کیا۔ وزیراعلی سندھ نے موجودہ وزیر بلدیات اور سابق وزیر بلدیات جام خان شورو کو 100 ایم جی ڈی کی تکمیل پر مبارکباد دی اور کہا کہ تمام مشینری جرمنی سے درآمد کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پانی اور ٹرانسپورٹ کے منصوبوں کی تکمیل ہماری اولین ترجیح ہے، پانی کو ضائع ہونے سے بچانے کیلئے اقدامات کر رہے ہیں۔ وزیراعلی سندھ نے کہا کہ سندھ حکومت کئی منصوبوں پر کام کر رہی ہے، سندھ میں حکومت عملی طور پر کام کر رہی ہے۔ وزیر اعلی سندھ نے کہا کہ کراچی کو پانی کی اشد ضرورت ہے، اس پمپنگ اسٹیشن سے 600 ایم جی ڈی پانی کراچی کو مہیا ہوگا۔ کراچی میں فلائی اوور اور انڈر پاسز کی کامیابی کے بعد پمپنگ اسٹیشن مکمل کیا۔ انہوں نے کہا کہ یہ منصوبہ 1.4 ارب روپے کی لاگت سے مکمل ہوا ہے، پمپ ہاؤس میں 4 نئے پمپس نصب کیے گئے ہیں۔ ہر پمپ کی گنجائش 25 ایم جی ڈی ہے۔ اس طرح شہر کو 100 ایم جی ڈی پانی زیادہ ملے گا۔ وزیر اعلی نے کہا کہ سنہ 1959 میں تعمیر پرانے پمپنگ اسٹیشن ابھی تک کام کر رہے تھے، پرانے پمپنگ اسٹیشنز کی گنجائش میں کافی حد تک کمی آچکی تھی۔ انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت حب سورس سے پانی لانے کے لیے اس کی کینال کی امپرومنٹ کا کام شروع کررہی ہے،حب کینال کی امپرومنٹ سے 30 فیصد پانی کے لائن لاسز ختم ہوجائیں گے جوکہ کراچی کے ضلع وسطی میں پانی کی کمی پورا کرنے کے لیے اہم ثابت ہوگا اور کراچی میں پانی کے مسئلہ کا حل اور اربن ٹرانسپورٹ پروجیکٹس کی تکمیل سندھ حکومت کی اولین ترجیح ہے۔ مراد علی شاہ نے کہا کہ سندھ حکومت کراچی سرکلر ریلوے (کے سی آر) کو دوبارہ سی پیک پروجیکٹس میں شامل کرانے میں کامیاب ہوگئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کے فور منصوبہ آپ سب کو معلوم ہے کوشش ہے وہ بھی ختم کریں، کوشش ہے کہ کے فور اور حب کا منصوبہ جلدی مکمل کرلیا جائے۔ منصوبے کے لیے مشینری جرمنی سے منگوائی گئی ہے۔ وزیر اعلی سندھ نے کہا کہ بجلی کے بلوں کی مد میں 6 ارب روپے واٹر بورڈ کو اضافی دیے، سانگھڑ، ٹنڈو محمد خان و دیگر شہروں کی سڑکیں تیار ہیں، افتتاح ابھی نہیں ہوا۔ وزیراعلی سندھ نے نام لیے بغیر کچھ لوگوں کو ہدف بناتے ہوئے کہا کہ نئے منصوبے بھی دیکھیں ہیں جہاں تختیاں بھی گرجاتی ہیں، میں انکو دعوت دیتا ہوں جن کو افتتاح کرنے کا شوق ہے یہاں آئیں اور افتتاح کریں۔ مراد علی شاہ نے اس عزم کا اظہار بھی کیا کہ چیئرمین پی پی پی اور سابق صدر آصف علی زرداری کی قیادت میں عوام کی خدمت کرتے رہیں گے۔ وزیراعلی سندھ نے مشترکہ مفادات کونسل(سی سی آئی)اجلاس سے متعلق اپنے خطاب میں کہا کہ ایک تو اجلاس نہیں ہوتے بالفرض ہو بھی گئے تو منٹس نہیں آتے، اگر منٹس آتے ہیں تو ان میں ہیرا پھیری کردی جاتی ہے۔ انہوں نے اپنے خطاب کے آخر میں کہا کہ میری کوشش ہے کہ ہم سندھ کے عوام کی خدمت کرتے رہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ پوری کوشش کریں گے سندھ کے عوام کی امیدوں پر پورا اتریں، سندھ کے عوام کی امیدیں پیپلز پارٹی سے ہیں۔قبل ازیں چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ کے ساتھ ہیلی کاپٹر پر دھابیجی پہنچے،صوبائی وزرا سعید غنی اور سید ناصر شاہ نے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا ہیلی پیڈ پر استقبال کیا،چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری پمپنگ کمپلیکس کا افتتاح کرنے کے بعد کمپلیکس کا دورہ کیا، جہاں پر انھوں نے وزیر بلدیات سندھ سید ناصر حسین شاہ کو ہالیجی سڑک جلد تعمیر کرنے کی ہدایت کی۔ دورے کے دوران چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری اور وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ کو ایم ڈی واٹر بورڈ اسداللہ نے 4 پمپنگ مشینز کے حوالے سے بریفنگ دی۔

مزید : صفحہ اول