اثاثہ جات کیس، خواجہ آصف کے مزید جسمانی ریمانڈ کی استدعا مسترد، جوڈیشل کردیا

اثاثہ جات کیس، خواجہ آصف کے مزید جسمانی ریمانڈ کی استدعا مسترد، جوڈیشل کردیا
اثاثہ جات کیس، خواجہ آصف کے مزید جسمانی ریمانڈ کی استدعا مسترد، جوڈیشل کردیا

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)احتساب عدالت نے اثاثہ جات کیس میں خواجہ آصف کے مزید جسمانی ریمانڈ کی نیب کی استدعا مسترد کرتے ہوئے جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا اور ملزم کو دوبارہ 4 فروری کو پیش کرنے کاحکم دیدیا۔

نجی ٹی وی سما نیوز کے مطابق احتساب عدالت میں آمدن سے زائد اثاثے کیس کی سماعت ہوئی،نیب نے خواجہ آصف کو احتساب عدالت میں پیش کردیا،نیب کی جانب سے خواجہ آصف کے مزید15 روز کے جسمانی ریمانڈ کی درخواست کردی گئی۔

نیب پراسیکیوٹر نے کہاکہ ہمیں کچھ لوگ ملے جنہوں نے خواجہ آصف کے اکاﺅنٹ میں پیسے جمع کرائے،ان لوگوں نے بتایاکہ یہ پیسے خواجہ آصف نے ہی دیئے تھے ۔

احتساب عدالت میں خواجہ آصف کیخلاف آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس کی سماعت کے دوران فاضل جج وکیل کے کمرہ میں ملنے پر برہم ہو گئے،جج جوادالحسن نے وکیل سے مکالمہ کرتے ہوئے کہاکہ آپ کون ہیں، مجھے آپ کمرے میں ملنے آئے تھے کہ آپ میرے سٹینورہ چکے ہیں ،جج جوادالحسن نے اظہار برہمی کرتے ہوئے کہاکہ اب آپ باہر آکر ملزم کے ساتھ کھڑے ہو گئے ہیں ،جج جوادالحسن نے حکم دیتے ہوئے کہاکہ ابھی آپ میری عدالت سے باہر چلے جائیں ،فاضل جج کے حکم پر وکیل کمرہ عدالت سے باہر چلا گیا ،جج جوادالحسن نے کہاکہ جس کی عزت کروں وہی میرے سر پر سوار ہوجاتا ہے۔

 عدالت نے خواجہ آصف کے ریمانڈ میں توسیع کی درخواست پر محفوظ فیصلہ سناتے ہوئے نیب کی مزید جسمانی ریمانڈ کی استدعا مسترد کردی اور انہیں جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا،عدالت نے ملزم کو دوبارہ 4 فروری کو پیش کرنے کاحکم دیدیا۔

مزید :

قومی -علاقائی -پنجاب -لاہور -