الیکشن کمیشن میں پی ٹی آئی کا کون سا ’دشمن‘ تھا جس کی وجہ سے فارن فنڈنگ کیس میں تاخیر ہوئی؟ وزیر اعظم کھل کر بول پڑے

الیکشن کمیشن میں پی ٹی آئی کا کون سا ’دشمن‘ تھا جس کی وجہ سے فارن فنڈنگ کیس ...
الیکشن کمیشن میں پی ٹی آئی کا کون سا ’دشمن‘ تھا جس کی وجہ سے فارن فنڈنگ کیس میں تاخیر ہوئی؟ وزیر اعظم کھل کر بول پڑے

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیر اعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ پچھلا الیکشن کمشنر تحریک انصاف کا دشمن تھا جس کی وجہ سے فارن فنڈنگ کیس میں تاخیر ہوئی۔

نجی ٹی وی اے آر وائی نیوز کے مطابق وزیر اعظم عمران کان نے فارن فنڈنگ کیس میں تاخیر کرنے کی وجہ بتادی۔ انہوں نے کہا ہے کہ پچھلا الیکشن کمشنر پی ٹی آئی کا دشمن تھا اور یہ نہیں ہوسکتا کہ ہمارا دشمن ہمارے اکاؤنٹ دیکھے، ن لیگ نے بدنیتی کی بنا پر چیف الیکشن کمشنر تعینات کیا تھا۔

وزیر اعظم کا کہنا ہے کہ انہیں آج کے الیکشن کمیشن پر ہمیں اعتماد ہے۔ انہوں نے اپوزیشن کو دعوت دیتے ہوئے کہا کہ آجائیں ، دودھ کا دودھ، پانی کا پانی ہوجائے گا۔

براڈ شیٹ کو جرمانے کی ادائیگی کے معاملے پر وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ ادائیگی نہ کرتے تو ہمیں پانچ ہزار پاؤنڈ یومیہ سود کی مد میں ادا کرنا پڑتے، براڈ شیٹ سے معاہدے کی تجدید وزارتی کمیٹی کرے گی۔

خیال رہے کہ مسلم لیگ ن کے دور حکومت میں دسمبر 2014 میں خیبر پختونخوا کے ضلع ایبٹ آباد سے تعلق رکھنے والے سپریم کورٹ کے ریٹائرڈ جج سردار رضا خان کو چیف الیکشن کمشنر تعینات کیا گیا تھا، ان کی زیر نگرانی ہی 2018 کے عام انتخابات ہوئے تھے۔ اب ڈاکٹر سکندر سلطان راجہ چیف الیکشن کمشنر کے طور پر خدمات سرانجام دے رہے ہیں۔ 

مزید :

اہم خبریں -قومی -