ابوظبی پر حوثیوں کے دہشت گرد حملے،سلامتی کونسل نےبھی خاموشی توڑ دی 

ابوظبی پر حوثیوں کے دہشت گرد حملے،سلامتی کونسل نےبھی خاموشی توڑ دی 
ابوظبی پر حوثیوں کے دہشت گرد حملے،سلامتی کونسل نےبھی خاموشی توڑ دی 
سورس: File Photo

  

 نیویارک (ڈیلی پاکستان آن لائن )اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نےمتفقہ طور پر حوثی باغیوں کے ابوظبی پر حملوں کی مذمت کرتے ہوئے اسے وحشیانہ دہشت گرد حملہ قرار دیا ہے اور انہیں انصاف کے کٹہرے میں لانے کی اپیل کی ہے۔

عرب ویب سائیٹ کے مطابق سلامتی کونسل نے ابوظہبی اور سعودی عرب میں مختلف جگہوں پر ہونے والے حملوں کی شدید مذمت کرتےہوئے زور دیاہے کہ دہشت گرد کارروائیاں کرنے والوں،ان کو منظم کرنے والوں اور ان کی مالی معاونت کرنے والوں کو پکڑ کر انصاف کے کٹہرے میں لایا جائے۔

متحدہ عرب  امارات(یو اے ای) کی نمائندہ لانا نوصیبہ نے کہا کہ حوثیوں کی سرکوبی کے لیے عالمی سطح پر زیادہ ایکشن کی ضرورت ہے، خاص طور پر غور کرنا چاہیے کہ انکی کارروائیاں صرف امارات کےلیےنہیں بلکہ اقوام متحدہ کےہررکن ملک کےلئےخطرہ ہیں،یو اےای اپنےشہریوں اوراسےاپناگھربنانےوالےدنیا کے  لاکھوں شہریوں کے  لئے فکرمند ہے۔

اس سے قبل متحدہ عرب امارات کے صدر کے مشیر انور قرقاش نے کہا کہ ان کا ملک اپنی سرزمین اور شہریوں کے دفاع کا قانونی و اخلاقی حق رکھتا ہے۔ اماراتی صدر کے مشیر نے یہ بات ایسے وقت میں کہی جب اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں ایک مشاروتی اجلاس منعقد کرنے کی تیاری کی جارہی ہےجس میں حوثیوں کی دہشت گردانہ کارروائیوں پربحث کی جائےگی۔اماراتی صدرکےمشیر انور قرقاش نے اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل برائے یمن کے خصوصی ایلچی ہانس گرنڈ برگ سے ٹیلی فون پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ امارات حوثی ملیشیا کی دہشت گردانہ کارروائیوں کے خلاف قانونی طور پر اپنے دفاع کا حق استعمال کرے گا۔ انہوں نے اس امر کی بھی وضاحت کی کہ اس سے قبل حوثیوں کی جانب سے جنگ بندی کے تمام مطالبوں کو مسترد کیا جاتا رہا ہے.

مزید :

بین الاقوامی -عرب دنیا -