یوٹیلیٹی سٹورز پر درجہ اول کا گھی، آئل نایاب، آٹا، چینی اور دالوں کی قلت 

یوٹیلیٹی سٹورز پر درجہ اول کا گھی، آئل نایاب، آٹا، چینی اور دالوں کی قلت 

  

 لاہور (لیڈی رپورٹر) لاہور بھر میں قائم یو ٹیلیٹی سٹورز عوام کو ریلیف فراہم کر نے میں نا کا م،درجہ اول کے گھی و آئل سمیت دالیں دستیاب نہیں، آٹا اور چینی کی فرا ہمی کے تعطل کی وجہ سے شہریو ں کو پریشا نی کا سا منا۔ تفصیلا ت کے مطا بق شہر بھر میں مہنگا ئی نے ڈیرے جما رکھے ہیں جس کی وجہ سے شہری سستی اشیا ء کی خریدا ری کے لئے یو ٹیلٹی سٹورز کا رخ کر تے ہیں لیکن یو ٹیلٹی سٹورز بھی مہنگا ئی زیا دہ ہو نے کی وجہ سے کھپت کو پورا کر نے میں نا کام دکھا ئی دے رہے ہیں شہر کے بیشتر یو ٹیلٹی سٹورز پر دالیں وغیرہ دستیا ب ہی نہیں۔مارکیٹ میں 20 کلو آٹے کا تھیلا 1100 روپے جبکہ چینی 90 روپے فی کلو فروخت کی جا رہی ہے۔ عوام کا کہنا ہے کہ اشیائے ضروریہ کے نرخ کنٹرول کئے جائیں۔ دوسری جانب برائلر، سبزیوں اور انڈوں کی قیمتوں میں اتار چڑھاؤجاری ہے۔ برائلر مرغی کا گوشت 3 روپے مہنگا ہوگیا جس کے بعد فی کلو قیمت 245 روپے ہوگئی۔ زندہ برائلر 169 روپے فی کلو ہوگیا۔ فارمی انڈے بدستور 166 روپے فی درجن فروخت ہو رہے ہیں۔سبزی مارکیٹ میں موسمی سبزیوں کی بھرمار ہے مگر ٹماٹر کی قیمت میں تیزی برقرار ہے۔ درجہ اول ٹماٹر کی سرکاری قیمت 60 روپے فی کلو مقرر مگر دستیابی انتہائی کم ہے، درجہ دوم ٹماٹر 70 روپے فی کلو فروخت کیا جا رہا ہے۔آلو، پیاز، شلجم، گاجر اور پالک 40 روپے فی کلو،ساگ 50، میتھی 60، سبز دھنیا 80، سبز مرچ 120، شملہ مرچ 150  اور گھیا کدو 120 روپے کلوکے حساب سے فروخت ہورہاہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -