برآمدات میں اضافہ

برآمدات میں اضافہ

  

قومی سطح پہ کام کرنے والے چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروباروں کے متعلق وزیراعظم پاکستان عمران خان نے  برآمدات کی پالیسی پہ روشنی ڈالتے ہوئے اسے ”سیلکان ویلی“ کی طرز پہ استوار کرنے کی طرف اشارہ کیا۔ تقریب سے خطاب کے دوران برآمدات کی اہمیت پر بھی روشنی ڈالی اور ایسے عناصر کو بیخ و بن سے اکھاڑ پھینکنے کا کہا، جنہوں نے برآمدات کی راہ میں طرح طرح کے روڑے اٹکائے ہیں۔وزیراعظم کی یہ خواہش اگر عملی صورت میں ڈھل جاتی ہے تو یہ پاکستان کی ڈانواں ڈول معیشت کے لیے بہت تحرک انگیز اور مفید ہو گا۔ یہ ہمارا المیہ ہے کہ ہم دوسرے ممالک سے چیزوں کو  ٹنوں کے حساب سے درآمد کرتے رہے ہیں، مگر بر آمدات کی طرف کبھی نظر نہیں دوڑائی، جس بنا پر ان دونوں میں کبھی توازن دیکھنے میں نہیں آیا۔ بڑھتی ہوئی درآمدات سے زرمبادلہ کا بحران بھی پیدا ہوا ہے،اور ملکی صنعت کی ترقی بھی نہیں ہو پا رہی۔برآمدات کو درآمدات سے زیادہ کرنا ہماری اولین ترجیح ہونی چاہیے کہ اس کے بغیر ہم کشکول توڑ نہیں سکیں گے۔

مزید :

رائے -اداریہ -