آئی ایم ایف سے 6ارب ڈالر لینے کیلئے ملکی خود مختاری کا سودا کیا گیا: سراج الحق 

آئی ایم ایف سے 6ارب ڈالر لینے کیلئے ملکی خود مختاری کا سودا کیا گیا: سراج ...

  

لاہور(آئی این پی)امیرجماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ ملک طاغوتی نظام کے شکنجے میں ہے، آئی ایم ایف سے چھ ارب ڈالر لینے کے لیے ملکی خودمختاری کا سودا کردیا گیا، آٹا، چینی، پٹرول اور دیگر سکینڈلز میں مافیاز نے عوام کی جیبوں پر 880 ارب کا ڈاکہ ڈالا، لٹیروں کو پکڑ کر لوٹی دولت وصول کی جاتی تو حکومت کو منی بجٹ میں ساڑھے تین سو ارب کے ٹیکسز نہ لگانے پڑتے۔ ملک 56 ہزار ڈالر کا مقروض ہے،تینوں حکمران سیاسی جماعتوں نے آئی ایم ایف اور ورلڈ بنک کی تابعداری کی، ہمارے حکمران واشنگٹن کے غلام ہیں۔ امریکا طاغوت کا پرچم بردار، پوری انسانیت کو غلام بنایا ہوا ہے۔ پونے دوارب مسلمانوں کے حکمران امت کی ترجمانی نہیں کرتے۔ طاغوتی طاقتوں نے مسلمان کو لڑایا اور تقسیم کیا۔ ایران عراق کی جنگ میں مسلمانوں کے قبرستان آباد ہوئے اور مغرب کے اسلحہ خانے، علما امت کو جوڑنے اور ملک میں اسلامی نظام کے نفاذ کے لیے جماعت اسلامی کا ساتھ دیں۔ ہمیں مل کر معیشت، عدالت، پارلیمنٹ، نظام تعلیم کو امریکا اور اس کے غلاموں سے آزاد کروانا ہے۔ جماعت اسلامی نظام میں تبدیلی چاہتی ہے، حقیقی تبدیلی کے لیے اہل اور ایماندار لوگوں کو امامت دینا ہوگی۔ جماعت اسلامی کو اقتدار ملا تو پورے ملک میں سودی معیشت کا خاتمہ کرکے اسلامی نظام معیشت رائج کریں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے منصورہ میں علما کنونشن اور جمعہ کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ شیخ الحدیث مولانا عبدالمالک، امیر جماعت اسلامی پنجابی جنوبی جاوید قصوری، امیر جماعت اسلامی ضلع لاہور ڈاکٹر ذکراللہ مجاہد اور امیر متحدہ جمعیت اہلحدیث سید ضیا اللہ شاہ بخاری بھی اس موقع پر موجود تھے۔

سراج الحق 

مزید :

صفحہ آخر -