بنوں،کرم تنگی ڈیم کے مسئلہ کے حل کیلئے آج قومی جرگہ ہوگا 

بنوں،کرم تنگی ڈیم کے مسئلہ کے حل کیلئے آج قومی جرگہ ہوگا 

  

بنوں (بیورورپورٹ)  اقوام بنوں کا کرم تنگی ڈیم کے مسئلے پر اتوار کو نصرادین سورانی میں قومی جرگہ منعقد کرنے کا اعلان،کرم تنگی ڈیم پر تحفظات دور نہ کئے گئے تو قومی تحریک کو وسعت دیں گے ان خیالات کا اظہار ملک جہانزیب خان سورانی نے اتوار کو ہونے والے جرگے کے حوالے سے میڈیا کو انٹرویودیتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ کرم تنگی کے پہلے فیز سے علاقہ سورانی کا ہزاروں کنال قابل کاشت زمین بنجر ہونے کے قریب ہے کاشت کاری کے لئے مشہور علاقہ سورانی کے عوام اج پانی کی قلت پر ایک دوسرے سے دست وگریباں ہیں انہوں نے کہا کہ دریائے کرم کے پانی ہمیں رواج میں ملی ہیں ہم اس میں کمی یا اس کی تقسیم کسی صورت قبول نہیں کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ کرم تنگی ڈیم سے ہمارا صرف قابل کاشت زمین متاثر نہیں ہورہی بلکہ ہمارا کریش اور بھٹہ خشت انڈسٹری بھی متاثر ہورہی ہے جس سے ہزاروں لوگ بے روزگار ہوں گے اور پھربے روزگاری سے بدمنی بڑھے گی اس لئے ہمارے کرم تنگی ڈیم پر تحفظات ہیں انہوں نے کہا کہ حکومت کو ہمارے ساتھ بیٹھ کر ہمارے حقوق کی تحفظ کی ضمانت دے کیونکہ ہمارے جو حقوق متاثر ہورہے ہیں اس کے بدلے میں بنوں کو بھی فائدہ پہنچانا چاہیئے جس میں بنوں پر واپڈا کے بقایاجات جو 6ارب روپے بنتے ہے وہ ادا کئے جائیں او ر ڈیم سے بننے والے 84 میگاواٹ بجلی میں سے بنوں کو 10 میگاواٹ بجلی سرکاری ریٹ پربجلی دی جائیں اور ساتھ ساتھ اندسٹریز،مراعاتی پیکج کے علاوہ رواج آبپاشی کے مطابق پانی بھی 1500 کے بجائے 2000کیوسک دیا جائے تاکہ تھل وزیر ایریا اور ممہ خیل لنڈیڈاک اور سرہ درگہ اور نار ایریا غوریوالہ شمشی خیل اور نورنگ ممہ خیل ایریا بھی سیراب ہوسکیں کیونکہ کرم تنگی ڈیم پر پہلا حق بنوں کے عوام کا ہیں بعد میں کسی اور کو دیا جائے گا۔انہوں نے تمام اقوام کے مشران سے پرزور مطالبہ کرتے کہا کہ اتوار کے قوم جرگہ میں شرکت کرے تاکہ ڈیم کے حوالے قوم کو اعتماد میں لیا جاسکیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -