نوشہرہ،خویشگی پایان میں پولیس کی شہری پر تشدد 

نوشہرہ،خویشگی پایان میں پولیس کی شہری پر تشدد 

  

نوشہرہ (بیورورپورٹ)نوشہرہ خویشگی پایان شہری پر پولیس چوکی میں بدترین تشدد اور حسب بے جا کیس۔ڈسٹرکٹ پولیس افیسر نوشہرہ نے سخت نوٹس لیتے ہوئے احمد آباد خیشگی کے رہائشی نوجوان کے تشدد واقع میں پولیس چوکی انچارج خیشگی معطل کرکے لائن حاضر کردیا گیا۔گزشتہ دنوں سوشل میڈیا پر چلنے والی خبر پر ڈسٹرکٹ پولیس افیسر محمد عمر خان نے بلال خان ASP کینٹ کی سربراہی میں انکوئری کے احکامات جاری کر دئے تھے دوران انکوائری چوکی انچارج جہانگیر کو قصور وار پاکر معطل کرکے لائن حاضر کر دیا گیا۔جوڈیشل مجسٹریٹ نوشہرہ نے ایس ایچ او تھانہ نوشہرہ کلاں کو طلب کرلیا۔تفصیلی رپورٹ طلب کرلی۔خویشگی احمد آباد کے رہائشی غریب دوکاندار نوجوان حامد اللہ نے عدالت جوڈیشل مجسٹریٹ نوشہرہ میں تحریری طور پر الزام لگایا کہ خویشگی چوکی انچارج جہانگیر خان نے دو 2 دن تک قانونی ضابطے کی کاروائی کئے بغیر حبس بے جا میں رکھ کر مار پیٹ اور بد ترین تشدد کرتے رہے بزرگ والد نے 60 ہزار روپے دے کر بیٹے کو چھڑوایا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -