اورسیز پاکستانیوں کے زیر استعمال موبائل فونز پر عائد ٹیکس کو ختم کیا جائے‘ نور شہید بنگش 

 اورسیز پاکستانیوں کے زیر استعمال موبائل فونز پر عائد ٹیکس کو ختم کیا جائے‘ ...

  

پشاور(سٹی رپورٹر) قطر پختون کمیونٹی نے بیرون ممالک میں مقیم پاکستانیوں کو درپیش مسائل کے حل کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ بیرون ممالک میں مقیم پاکستانیوں کیلئے پاکستان آنے سے پہلے پی سی آرٹیسٹ کا دورانیہ 72گھنٹے تک بڑھایا جائے،پاکستان کے زیر انتظام تمام بیرون ممالک میں قائم سکولز،کالجز اور یونیورسٹیوں کو اپ گریڈ کیا جائے،اورسیز پاکستانیوں کے بچوں کیلئے ٹیکنیکل تعلیم کی فراہمی کا بندو بست کرنے سمیت اورسیز پاکستانیوں کے ذاتی استعمال کے موبائل فونز پر عائد ٹیکس ختم کیا جائے اور اوورسیز کے زیر استعمال گاڑیاں پاکستان لانے پر کسٹم ڈیوٹی ختم کی جائے جبکہ مختلف مقابلے کے امتحانات کا انعقاد بیرون ممالک میں کرنے کا بند وبست کیا جائے۔پشاور پریس کلب میں قطر پختون کمیونٹی کے سرپرست اعلیٰ نور شہید بنگش،چیئرمین ازرم خان چمکنی،صدر نذیز گل اورکزئی اور وائس چیئرمین واجد خان اورکزئی نے دیگر عہدیداروں کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ بیرون ممالک میں مقیم پاکستانیوں کو مختلف مسائل کا سامنا ہے جبکہ حالیہ کورونا وباء کے پیش نظر مشکلات مزید بڑھ چکی ہیں اور پاکستان آنے سے 48گھنٹے قبل پی سی آر ٹیسٹ مانگا جاتا ہے جبکہ رزلٹ میں ٹائم لگتا ہے جسکی وجہ سے سفری مشکلات بڑھ جاتی ہیں جبکہ اورسیز پاکستانیوں کو تعلیم اور بچوں کی نوکریوں کے مسائل کا بھی سامنا ہے اورسیز پاکستانیوں نے مطالبہ کیا ہے کہ اورسیز پاکستانی جنہوں نے دس سے پندرہ سال گزارے اگر پاکستان ذاتی استعمال کی گاڑی ساتھ لانا چاہتے ہیں تو اس پر کسٹم ڈیوٹی سے مستثنیٰ قرار دیا جائے، ا وورسیز کے بچوں کے بہتر مستقبل کیلئے آئی ایس ایس بی،پی ایم ایس اور سی سی ایس کے امتحانات کا انعقاد بیرون ممالک کرنے کیلئے اقدامات کر کے سہولت فراہم کی جائے،اورسیز پاکستانیوں کے مسائل کے حل کیلئے خصوصی تھانہ بنایا جائے،اورسیز پاکستانیوں کو قومی اسمبلی میں نمائندگی دینے کیلئے سیٹس مختص کی جائیں جس پر انتخابات کر کے اوورسیز کی بہتر انداز میں نمائندگی کا موقع دیا جائے اور قطر میں پاکستان کے سفارت خانہ پر کمیونٹی کا بوجھ بڑھ چکا ہے لہٰذا میل و فی میل سٹاف ایمبیسی میں بڑھایا جائے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -