دیہی علاقوں میں مہاجر غیر محفوظ ہوگئے ہیں: ڈاکٹر سلیم حیدر

دیہی علاقوں میں مہاجر غیر محفوظ ہوگئے ہیں: ڈاکٹر سلیم حیدر

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)مہاجر اتحاد تحریک کے چیئرمین ڈاکٹر سلیم حیدر   نے کہا ہے کہ ٹنڈوالہیار میں علیحدگی پسند دہشت گردوں کی فائرنگ کے نتیجے میں بھولو خانزادہ کی شہادت کا اعلیٰ سطح پر نوٹس لیا جائے۔ سندھ کے دیہی علاقوں میں مہاجر غیر محفوظ ہوتے جارہے ہیں۔ آئے دن سندھی نسل پرست سندھودیش کے حامی علیحدگی پسند مہاجروں کی زمینوں پر قبضے انہیں دہشت زدہ کرنے اور ان کے ساتھ امتیازی سلوک کررہے ہیں لیکن صوبائی و وفاقی  حکومت اس ظلم و زیادتی پر خاموش ہے۔ انہوں نے کہاکہ ٹنڈوالہیار میں بھولو خانزادہ کو قتل کے جھوٹے مقدمے میں ملوث کیا گیا اس کے بعد اسے مقدمے کے دوران سماعت کھلے عام دہشت گردی کا نشانہ بنایا گیا جو اس بات کا ثبوت ہے کہ سندھ کے دیہی علاقوں میں سندھودیش کے علیحدگی پسندوں نے اپنی ریاستیں قائم کرلی ہیں وہ جس کو چاہتے ہیں قتل کردیتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ٹنڈوالہیار کی انتظامیہ اور پولیس کو اس بات کا اندازہ تھا کہ بھولو خانزادہ اور ان کے اہل خانہ کو علیحدگی پسندوں کی جانب سے مسلسل دھمکیاں دی جارہی ہیں اس کے باوجود اس کی حفاظت کیلئے کوئی اقدامات نہیں کئے گئے۔ انہوں نے کہا کہ اب حالت یہ ہوگئی ہے کہ علیحدگی پسند دیہی علاقوں کے ساتھ ساتھ شہری علاقوں میں بھی حکومتی ایماء پر کھلی دہشت گردی کررہے ہیں اور انہیں روکنے والا کوئی نہیں ہے۔ 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -