کوٹ ادو، سیاسی دباؤ، 48کروڑ کا منصوبہ فلڈایریا منتقل، ہائیکورٹ نے رپورٹ مانگ لی 

کوٹ ادو، سیاسی دباؤ، 48کروڑ کا منصوبہ فلڈایریا منتقل، ہائیکورٹ نے رپورٹ مانگ ...

  

  کوٹ ادو(تحصیل رپورٹر)اعلیٰ سیاسی شخصیات کی کوٹ ادو کی عوام سے زیادتی,48کروڑ روپے کی خطیر رقم سے اے ڈی پی سکیم نمبر 5110 کوٹ ادو میں منظور ہونے والے روڈ کے منصوبے کو فلڈ ایرا میں منتقل کر دیا،48 کروڑ کا ترقیاتی منصوبہ کرپش کی نذر ہوگیا۔تفصیل کے مطابق کوٹ ادوسے تونسہ بیراج براستہ ٹی پی لنک کینال اے ڈی پی سکیم 48کروڑ میں منظور ہوئی تھی ٹینڈر کے بعد اعلیٰ سیاسی شخصیت (بقیہ نمبر55صفحہ6پر)

کے کہنے پر شمالی پھاٹک کوٹ ادو کے بجائے منصوبے کو ٹی پی لنک کینال بینک پر شفٹ کر دیا گیا۔فلڈ ایریاہے تونسہ بیراج پر ٹریفک کراسنگ کیلئے پل نہیں،ریلوے کراسنگ بھی موجود نہیں۔ ٹی پی لنک کینال فلڈ ایریا جو کہ 2010 کے فلڈ میں  کینال بینک سب سے زیادہ متاثر ہوا تھاجس کے ٹوٹنے کی وجہ سے کوٹ ادو دائرہ دین پناہ سنانواں قصبہ گجرات چوک قریشی سمیت مظفر گڑھ علی پور تک کا علاقہ متاثر ہوا تھاجہاں پر لوگوں کے گھروں میں پچیس پچیس فٹ تک پانی چلا گیا تھا مگر زمین لیول سے 25 فٹ اونچا روڈ  تعمیر کیا جا رہا ہے۔ غیر قانونی روڈ کی تعمیر کے خلاف کوٹ ادو کے شہری کی طرف سے ہائی کورٹ میں پٹیشن دائر کردی گئی، معزز عدالت نے سیکٹریریCNW سے رپورٹ طلب کر لی،این او سی کے بغیر شروع ھونے والے روڈکو روکنے کیلے محکمہ ایریگیشن کی جانب سے لیٹر جاری ہوا جس میں محکمہ ایریگیشن نے واضح طور لکھا کہ ٹی پی لنک مظفر گڑھ کینال کے ہیڈ ریگولیٹر اور پل ہیوی ٹریفک کا دبا برداشت نہیں کر سکتے اور ہائی وے مظفر گڑھ این او سی  کے ساتھ ہیوی ٹریفک کیلئے اپنے پل تعمیر کرے، 19 جنوری کو لکھے گئے لیٹر میں پل ہیوی ٹریفک کے لیے ممنوع قرار دیتے ہوئے کام روک دیا،ایریگیشن کے نوٹیفکیشن کے مطابق روڈ یا کوئی ترقیاتی منصوبہ ایریگیشن کی این او سی کے بغیر شروع نہیں ہو سکتا ہائی وے مظفر گڑھ 48کروڑ کی لاگت سے میٹل روڈ فلڈ ایریا میں تعمیر کر رہا ہے جو کہ عوام کے ٹیکس کے پیسوں کوضالع کرنے کے مترادف ہے،دوسری طرف اعلیٰ سیاسی شخصیات کے کام میں مداخلت کی وجہ سے فوری طور پر ایکسیئن تونسہ بیراج امیر تیمور کا  تبادلہ کر دیا گیا ذرائع کے مطابق 19 جنوری کو ایکسیئن امیر تیمور نے ہائی وے کو ایک  لیٹر جاری کیا جس میں انہوں نے این سی او نہ دینے کا حوالہ دیا جو انکے تبادلے کی خاص وجہ بنا،نوٹیفکیشن لیٹر کے مطابق اگر کوئی  دوسرامحکمہ ایریگیشن کی ایریامیں ڈویلپمنٹ کرنا چاہتا ہے تو کم سے کم10ہزار فیس کے ساتھ کینال بینک پر فی1ہزار فٹ کا ایک لاکھ روپے این او سی کے بعد جمع کروانے کا پابند ہو گا،شہریوں نے وزیراعظم پاکستان عمران خان، چیف جسٹس آف پاکستان سے اپیل کہ کوٹ ادو کی عوام سے ہونے والی ناانصافی اور زیادتی پر نوٹس لے کر کوٹ ادو سے تونسہ بیراج تک ون ویروڈ تعمیر کیا جائے تاکہ کوٹ ادو کی عوام کوموت اورحادثات سے بچایا جائے۔

منصوبہ منتقل

مزید :

ملتان صفحہ آخر -