باغبانوں کو سردی و کورے سے بچاؤ کیلئے ہدایات

باغبانوں کو سردی و کورے سے بچاؤ کیلئے ہدایات

  

فیصل آباد (اے پی پی):محکمہ زراعت نے سردی اورکورے کے نقصان دہ اثرات سے بچا کیلئے باغبانوں کو پودوں کے تنوں پرچونے اور نیلے تھوتھے کے محلول سے فوری سفیدی کی ہدایت کی ہے تاکہ پودوں کو مضر اثرات سے بچانا ممکن ہو سکے اور سردی کے اثرات کو بھی کم کرنے میں مدد لی جاسکے باغات میں پودوں کے تنے کے گرد پرانی بوری یاپرالی لپیٹ کر بھی سردی کااثر کم کیاجاسکتاہے۔

انہوں نے بتایاکہ موسم سرما میں کیڑے اور بیماریاں پھلوں کے پودوں کو کمزور کردیتی ہیں اس لئے ان کا بروقت تدارک ضروری ہے تاکہ پودے تندرست و توانا رہ سکیں۔انہوں نے کہاکہ کہر کی متوقع راتوں میں آبپاشی کی جائے کیونکہ اس سے زمین کے درجہ حرارت میں خاطرخواہ کمی نہیں ہوتی اور پودوں کے خلیوں میں پانی کی مقدار بڑھ جاتی ہے۔انہوں نے کہاکہ باغات میں مختلف جگہوں پر گڑھے کھود کر ان میں پتے، گھاس، پھوس،بھوسہ یا پرالی وغیرہ جلا کر دھواں کرنے سے بھی کورے کے اثر کو کم کیاجاسکتاہے۔ انہوں نے بتایاکہ نرسری میں نازک پودے سخت سردی سے بری طرح متاثر ہوتے ہیں اس لئے اگر مناسب احتیاطی تدابیر اختیار نہ کی جائیں تو یہ پودے مربھی جاتے ہیں لہذا ان کو سرکنڈے یا پرالی سے اچھی طرح ڈھانپنا ضروری ہے۔

مزید :

کامرس -