امریکہ میں پہلی مرتبہ مسلمان خاتون کو وفاقی جج مقرر کردیا گیا

امریکہ میں پہلی مرتبہ مسلمان خاتون کو وفاقی جج مقرر کردیا گیا
امریکہ میں پہلی مرتبہ مسلمان خاتون کو وفاقی جج مقرر کردیا گیا

  

واشنگٹن(ڈیلی پاکستان آن لائن) امریکی صدر جوبائیڈن نے ملکی تاریخ میں پہلی مرتبہ ایک مسلمان خاتون کو وفاقی جج مقرر کردیا ہے۔

نامزد ہونے والی خاتون جج کا تعلق بنگلہ دیش سے ہے۔صدر جوبائیڈن نے ڈسٹرکٹ کورٹ برائے ایسٹرن ڈسٹرکٹ آف نیویارک کے لیے امریکن سول لبرٹیز یونین الینائی کی لیگل ڈائریکٹر نصرت جہاں کو نامزد کیا ہے۔بنگلہ دیشی نژاد 44 سالہ نصرت جہاں امریکہ کی وفاقی جج بننے والی پہلی مسلم خاتون ہوں گی۔ جوبائیڈن اب تک 83 عدالتی نامزدگیاں کرچکے ہیں جن میں زیادہ کثیر النسل اور مختلف طبقات سے تعلق رکھنے والوں کے علاوہ خواتین بھی شامل ہیں۔

واضح رہے کہ  نصرت جہاں کی بطور وفاقی جج نامزدگی کو ابھی امریکی سینیٹ سے منظور ہونا باقی ہے تاہم حکومت کی اکثریت کے باعث منظوری کا قوی امکان ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -