سپریم کورٹ نے سحر و افطار میں لوڈ شیڈنگ کا نوٹس لے لیا

سپریم کورٹ نے سحر و افطار میں لوڈ شیڈنگ کا نوٹس لے لیا
سپریم کورٹ نے سحر و افطار میں لوڈ شیڈنگ کا نوٹس لے لیا

  


اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) سپریم کورٹ نے سحراور افطار کے اوقات میں بجلی کی لوڈشیڈنگ کا ازخود نوٹس لے لیا اور اس ضمن میں چیئرمین این ٹی ڈی سی سے جواب طلب کرلیاگیاہے ۔ مقامی میڈیا کے مطابق مہمند ایجنسی سے سینیٹرہلال الرحمان نے چیف جسٹس آف پاکستان کے نام لکھے گئے خط میں موقف اپنایاکہ حکومت نے یکساں لوڈشیڈنگ کرنے کے عدالتی حکم کو نظراندازکیا اور سحروافطار کے اوقات میں لوڈشیدنگ نہ کرنے کے اعلان اور یقین دہانیوں کے باوجود 18,18گھنٹے کی لوڈشیڈنگ جاری ہے ۔سپریم کورٹ نے سینیٹر کے خط پر از خود نوٹس لیتے ہوئے چیئرمین این ٹی ڈی سی سے لوڈشیڈنگ کرنے کی وجوہات طلب کرلیں ۔بتایاگیاہے کہ لوڈ شیڈنگ  سے متعلق کیس کی آج سماعت ہورہی ہے اور چیئرمین آج ہی ازخود نوٹس کا جواب دیں گے ۔جیو نیوز کے مطابق سپریم کورٹ نے صرف فاٹا میں سحرو افطار میں لوڈشیڈنگ کانوٹس لیا۔

مزید : قومی


loading...