نظر اندازی،کیون پیڑسن کا افریقہ کی طرف سے کھیلنے پر غور

نظر اندازی،کیون پیڑسن کا افریقہ کی طرف سے کھیلنے پر غور

لندن(صباح نیوز)دس سال تک انگلش ٹیم کی نمائندگی کرنے والے جارحانہ مزاج بلے باز کیون پیٹرسن نے محرومی پر انگلینڈ کرکٹ کو خیرباد کہہ کر جنوبی افریقہ کی طرف سے کھیلنے پر غور شروع کر دیا۔انگلش اسٹارکیون پیٹرسن مستقبل میں جنوبی افریقہ کی نمائندگی کریں گی۔سابق کپتان نے اپنے آبائی وطن میں گھربنوانا بھی شروع کردیا۔میڈیا سے دوران گفتگو میں سابق برطانوی بلے باز کیون پیٹرسن کا کہنا ہے کہ انہوں نے جنوبی افریقہ کی جانب سے انٹر نیشنل کرکٹ کھیلنے کے دروازے ابھی بند نہیں کیے ہیں ۔ 37سالہ کیون پیٹرسن 2019ء میں جنوبی افریقہ کی نمائندگی کے اہل ہوجائیں گے کیونکہ وہ 2013-14کے بعد سے انگلینڈ کیلئے انٹر نیشنل کرکٹ نہیں کھیلے ہیں۔انگلش نیٹ ویسٹ ٹی ٹونٹی بلاسٹ میں سرے کے لیے دھواں دھار نصف سنچری سکور کرنے کے بعد جب ایک صحافی نے اس بارے میں پیٹرسن سے سوال کیا تو ان کا کہنا تھا کہ آپ دو سال بعد کی بات کررہے ہیں ،کیا میں یہ کرپاؤنگا ؟ ،کون جانتا ہے، ہمیں ابھی انتظار کرنا اور دیکھناہے کہ دو سال بعد میں کہاں کھڑا ہوں گا ۔پیٹر سن کا مزید کہنا تھا کہ وہ اگلے دو برس جنوبی افریقہ میں بہت کرکٹ کھیلیں گے لہٰذ ہم دیکھیں گے ، مجھے بیٹنگ پسند ہے اورجب تک اس سے محبت رہے گی میں بلے بازی کرتا رہوں گا ،اب میں بوڑھاہوچکاہوں اور ابھی ابھی زخمی ہوا ہوں ،کون جانتا ہے 2سال بعد میں کہاں ہوں گا ،اگر اس وقت بھی میں بیٹنگ سے لطف اندوز ہوتا رہا تو ہم دیکھیں گے کہ تب کیا ہوگا ۔خیال رہے کہ کے پی نے 104 ٹیسٹ، 136 ون ڈے اور 38ٹی 20انٹرنیشنل میچز میں انگلینڈ کی نمائندگی کی لیکن ایشیز سیریز 2014ء کے بعد ٹیم میں اختلافات سامنے آئے اور انہیں ٹیم سے علیحدہ کر دیا گیاجس کے بعدانہیں سلیکٹ نہیں کیاگیا۔واضح رہے کہ 37 سالہ بلے باز جنوبی افریقہ میں پیدا ہوئے اور 2004 سے کرکٹ کا آغاز انگلینڈ میں کیا۔گزشتہ روز پیٹرسن نے انگلش کانٹی سرے کی طرف سے 52 رنز کی اننگ کھیلی، ایک اوور میں شاندار چار چھکے جڑے اور ٹیم کو یادگار فتح دلائی۔ پیٹرسن کا کہنا تھا کہ مسلسل نظر انداز کیے جانے پر وہ سخت مایوس ہیں، اگر زیادتیوں کا یہی سلسلہ رہا تو انگلینڈ کے بجائے جنوبی افریقہ سے کھیلنا شروع کر دیں گے۔ سابق کپتان نے اپنے آبائی وطن میں گھربنوانا بھی شروع کردیا۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی