سپریم کورٹ کا فیصلہ ہر صورت میں قبول کریں گے،رانا ثناء اللہ

سپریم کورٹ کا فیصلہ ہر صورت میں قبول کریں گے،رانا ثناء اللہ

لاہور(اے این این )صوبائی وزیر قانون رانا ثناء اللہ خاں نے کہا ہے کہ سپریم کورٹ کا فیصلہ حق میں ہو یا مخالفت میں اسے قبول کریں گے‘ ذوالفقاربھٹو اور نوازشریف کا کیس سیاسی ہے، نوازشریف کی 36 سال کی سیاسی زندگی میں کوئی الزام ان پر نہیں لگایا جاسکتا۔ پوری پارٹی نواز شریف کے ساتھ کھڑی ہے ،فیصلہ حق میں نہیں آیا تو پارٹی عوام کی عدالت میں ضرور جائے گی اور انشاء اللہ ہم وہاں سرخرو ہونگے۔ظفر حجازی کے معاملے میں نچلے افسران پر دباؤ ڈالا گیا کہ وہ ان کے خلاف بیان دیں۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے قانون رانا ثناء اللہ خاں نے کہا کہ چند لوگ اپنی خواہشات کا بار سپریم کورٹ کے کاندھے پر ڈالنا چاہتے ہیں مگرسپریم کورٹ کے جج تمام باتوں کا ادراک رکھتے ہیں ایسا کوئی فیصلہ نہیں ہونا چاہیے جس کا خمیازہ آئندہ برسوں تک برداشت کرنا پڑے۔انہوں نے کہا کہ چودھری نثار علی خان اور وزیراعظم نواز شریف کا بہت پرانا اور گہرا تعلق ہے، چودھری نثار کو اس بات کا گلہ ضرور ہے کہ مختلف مواقع پر ان کی رائے کو اہمیت نہیں دی جا سکی،چودھری نثار کی طبیعت ٹھیک نہیں،وزیرداخلہ طبیعت سنبھلنے کے بعد وزیراعظم ہاؤس میں مشاورتی عمل کا اہم حصہ بھی ہوں گے۔

مزید : صفحہ آخر