مانتا ہوں میں شاطر ہوں

مانتا ہوں میں شاطر ہوں
 مانتا ہوں میں شاطر ہوں

  

اسلام آباد(اے این این) پیپلزپارٹی کے سینیٹراور سابق وزیر داخلہ رحمن ملک نے کہا ہے کہ مشترکہ تحقیقاتی ٹیم (جے آئی ٹی )نے ان کی رپورٹ کو بوگس نہیں مستند قرار دیا ۔ اپنی رہائش گاہ پرمیڈیاسے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ میں نے جے آئی ٹی کو وہ تمام معلومات دیں جو ان کے پاس پہلے نہیں تھیں دواضافی معلومات بھی دیں۔انہوں نے کہاکہ جے آئی ٹی رپورٹ نے میری رپورٹ کو مستند قراردیا ہے، لیکن پھر جے آئی ٹی نے کہا کہ رحمن ملک نے جھوٹ بولا اس پر دلی افسوس ہوا۔ انہوں نے کہا کہ مجھے شاطر کہا گیا، مانتا ہوں میں شاطر ہوں، اگر شاطر نہ ہوتا تو انویسٹگیٹر کیسے ہوتا؟۔ رحمن ملک نے کہا کہ وضاحت دے چکا ہوں اب اس کے بعد کسی نے کچھ کہا تو وقت پڑنے پر سپریم کورٹ جاسکتا ہوں اور ہتک عزت کا دعویٰ بھی کر سکتا ہوں۔ رحمن ملک نے سپریم کورٹ کے فیصلے سے متعلق کہا کہ ایک نہیں کئی نا اہلیاں دیکھ رہا ہوں

مزید : صفحہ اول