ثریا ملتانیکر سرائیکی وسیب نہیں پورے پاکستان کا فخر ہیں‘ غزالہ سیال

ثریا ملتانیکر سرائیکی وسیب نہیں پورے پاکستان کا فخر ہیں‘ غزالہ سیال

ملتان (سٹی رپورٹر)میڈیم ثریا ملتانیکر صرف سرائیکی وسیب ہی نہیں پاکستان کا فخر ہیں، ان جیسی گائیک روز روز نہیں بلکہ صدیوں بعد پیدا ہوتی ہیں۔ ان خیالات کا اظہار ممبر سندھ اسمبلی غزالہ سیال نے ثریہ ملتانیکر سے ملاقات کے دوران کیا، اس موقع پر غزالہ سیال کے شوہر مولانا عبدالمومن میمن ، سرائیکستان قومی کونسل کے صدر ظہور دھریجہ اور جنرل سیکرٹری عابد سیال موجود تھے۔ انہوں نے کہا کہ(بقیہ نمبر11صفحہ12پر )

سندھ سرائیکستان کی موسیقی ایک جیسی ہے ، سندھی اور سرائیکی زبان کا عظیم رشتہ صدیوں سے موجود ہے ، ہماری زبان، ثقافت اور رسم و رواج ایک جیسے ہیں ۔ ثریا ملتانیکر نے کہا کہ میری آواز میرے سرائیکی وسیب اور میرے پیارے پاکستان کے لئے ہے ، میں جب تک زندہ رہونگی اپنے وطن کے لئے گاتی رہونگی کہ موسیقی سے مجھے عشق ہے ۔ انہوں نے کہا کہ میں گھر میں جب اپنی اولاد سے ناراض ہوتی ہوں تو وہ مجھے کسی اچھے سنگر کی کلاسیکل موسیقی سنا کر منا لیتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ مجھے اپنی دھرتی، اپنی مٹی اور اپنے وسیب سے بہت پیا رہے، میری دلی آرزو اور تمنا ہے کہ میں اپنی زندگی میں سرائیکی صوبہ دیکھوں، انہوں نے کہا کہ سرائیکستان عوامی اتحاد کی طرف سے جو لانگ کا اعلان کیا گیا ہے میں اس کا خیر مقدم کرتی ہوں ،میں اپنے فنکار اور گلوکار برادری سے وہ ان پروگراموں میں بڑھ چڑھ کر شریک ہوں اور ہر جگہ اپنی سرائیکی ماں بولی کے لئے محبت کے گانے لوگوں کو سنائیں۔ اس موقع پر مولانا عبدالمومن نے کہاکہ آواز عطیہ خدا وندی ہے یہ سب کو نہیں ملتا، کسی کسی کے نصیب میں آتا ہے، انہوں نے کہا کہ المغنی المصور ایسے متبرک نام نہیں جو فن اور آواز کے سلسلے میں ہیں ، انہوں نے کہا کہ لحن داؤدی سے کوئی انکار نہیں کر سکتا ، انہوں نے کہا کہ مجھے میڈم ثریا ملتانیکر سے ملنے کی ایک مدت سے آرزو تھی جو آج پوری ہوئی ۔ ظہور دھریجہ نے کہا کہ ثریا ملتانیکر ہمارا فخر ہیں، ہم ان پر جتنا ناز ہیں کم ہے، انہوں نے کہا کہ ثریا ملتانیکر نے سرائیکستان لانگ مارچ کی حمایت کر کے ہمارے دل جیت لئے ہیں اور ہم ان کا جتنا شکریہ ادا کریں کم ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر