وزیر اعظم کو مستعفی ہوجا نا چاہئے: ناصر عباس شیرازی

وزیر اعظم کو مستعفی ہوجا نا چاہئے: ناصر عباس شیرازی

مظفرگڑھ ( نمائندہ پاکستان ). مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ڈپٹی سیکرٹری جنرل سید(بقیہ نمبر49صفحہ7پر )

ناصر عباس شیرازی جنوبی پنجاب کے دورہ جات کے دوران مرکزی امام بارگاہ کوٹ ادو میں عمائدین سے ملاقات کی اور خطاب کیا۔ انہوں نے کہا پاکستان کے استحکام کے لیے انصاف کا عمل بہت ضروری ہے۔ موجودہ وزیر اعظم نواز شریف اب کوئی اخلاقی جواز نہیں رکھتے کے وہ اب بھی وزارت عظمی کے عہدہ پر فائز رہیں۔ اس لیے انہیں فورا استعفی دینا چاہیے۔ جنوبی پنجاب کی عوام کا معاشی استحصال کیا گیا۔ اس خطہ میں عوام کو صحت اور تعلیم جیسی بنیادی ضروریات سے محروم رکھا گیا ہے۔ اس کے ساتھ کل مستونگ میں ہونے والے سانحہ پرحکومت کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا۔بلوچستان حکومت امن قائم کرنے میں بری طرح ناکام ہو چکی ہیں،دہشتگردوں کے نرسری کالعدم شدت پسند گروہ کو بلوچستان میں مکمل آزادی دینا دہشتگردی کیخلاف جنگ کو ناکام بنانے کی سازش ہے، ان دہشتگردوں گروہوں نے نام بدل کر پورے پاکستان کو یرغمال بنایا ہوا ہے اور اب یہ سارے دہشتگرد گروہ داعش کے کے جھنڈے تلے منظم ہوکر پاکستان کو اپنی آماجگاہ بنانے میں کوشاں ہیاور ہر سانحے کے بعد باقاعدہ طورپر داعش واقعے کی ذمہ داری نہ صرف قبول کرتی ہے بلکہ آئندہ بھی اسی طرح کے حملوں کی دھمکیاں دیتی ہے ،وزیر داخلہ سرفراز بگٹی اگر عوام کی جان و مال کی حفاظت نہیں کر سکتے یا پھر وزیر داخلہ کے پاس اختیارات نہیں ہے تو تو اپنے عہدہ سے مستعفی ہوجائیں۔

ناصر عباس

مزید : ملتان صفحہ آخر