انسٹرکٹر کے تشدد کیخلاف پولیس ٹریننگ انسٹی ٹیوٹ کے باہر ریکروٹس کا احتجاجی مظاہرہ

انسٹرکٹر کے تشدد کیخلاف پولیس ٹریننگ انسٹی ٹیوٹ کے باہر ریکروٹس کا احتجاجی ...

ملتان(کرائم رپورٹر) انسٹرکٹر کے تشدد اور ناوا سلوک پر پولیس ٹریننگ انسٹیٹیوٹ کے باھر پولیس میں تربیت حاصل کرنے والے ریکروٹس کا احتجاجی مظاہرہ،انسٹرکٹر اور ٹریننگ (بقیہ نمبر36صفحہ12پر )

کیمپ انتظامیہ کے خلاف شدید نعرے بازی تفصیل کے مطابق گزشتہ روز پولیس ٹریننگ انسٹیٹیوٹ ملتان کے باہر سینکڑوں کی تعداد میں ریکروٹس باہر نکل آئے اور نعرے بازی شروع کردی ،اس موقع پر شہریوں کی بڑی تعداد موقع پر اکٹھا ہوگئی۔ جبکہ ریکروٹس بھی اپنے زخمی ساتھیوں کاندھوں پر اُٹھا کر باہر لے آئے اطلاع ملنے پر پولیس کی بھاری نفری بھی موقع پر پہنچ گئی،ریکروٹس نے سڑک بلاک کردی اور احتجاجی مظاہرہ کیا اس دوران ان کا کہنا تھا کہ دوران ٹریننگ ہمیں سخت ترین اذیت دی جاتی ہیں۔ سخت ترین گرمی میں انسٹرکٹرز جانوروں سے بھی بدتر سلوک کرتے ہیں۔انہوں نے مزید بتایا کہ پولیس تشدد اور د وران ٹرینگ انسٹی ٹیوٹ کے 5 ریکروٹس زخمی ہوئے ہیں۔ دوران ٹرینگ تربیتی کانسٹیبلز کو بیماری کی صورت میں ہسپتال تک نہیں لے کر جایا جاتا۔اس دوران مختلف اضلاع سے آنے والے ریکروٹس نے نعرے بازی کی اور ضلع واپسی کا مطالبہ بھی کیا۔ دوسری جانب سٹی پولیس آفیسر احسن یونس ایس ایس پی انوسٹیگیشن جواد طارق موقع پر پہنچ گئے ۔جس پر ریکروٹس پی ٹی ایس کے اندر چلے واپس چلے گئے،ترجمان پولیس ٹریننگ انسٹیٹیوٹ کا کہنا ہے کہ پنجاب کے 20سے زائد اضلاع سے تعلق رکھنے والے نئے بھرتی شدہ ریکروٹس نے پولیس ٹریننگ انسٹیٹیوٹ میں چار یوم قبل حاضری کی اور ساتھ ہی مطالبہ شروع کردیا کہ ہمارے اضلاع ہمیں واپس بھجوایا جائے جہاں پرہم ٹریننگ کرسکیں،جبکہ کسی بھی ٹریننگ کے لیے ٹریننگ انسٹیٹیوٹ کی نامزدگی آئی جی پنجاب کی جانب سے سنٹر کی دستیابی کے مطابق کی جاتی ہے اس لیے انہوں نے غیر ذمہ دارانہ اور غیر پیشہ وارانہ رویہ اختیار کرتے ہوئے احتجاج شروع کردیا۔تاہم موقع پر پولیس حکام اور سینئیر افسران نے کی جانب سے ان کوبریفنگ دی گئی ۔جس پر انہوں نے احتجاج ختم کردیا۔

مزید : ملتان صفحہ آخر