اس نوجوان لڑکی نے 21 روز تک کھانا نہیں کھایا، صرف چائے اور پانی پر گزارہ کرتی رہی، اس سے جسم اور صحت میں کیا تبدیلی آئی؟ جان کر آپ بھی دنگ رہ جائیں گے

اس نوجوان لڑکی نے 21 روز تک کھانا نہیں کھایا، صرف چائے اور پانی پر گزارہ کرتی ...
اس نوجوان لڑکی نے 21 روز تک کھانا نہیں کھایا، صرف چائے اور پانی پر گزارہ کرتی رہی، اس سے جسم اور صحت میں کیا تبدیلی آئی؟ جان کر آپ بھی دنگ رہ جائیں گے

  

اوٹاوا(مانیٹرنگ ڈیسک) کینیڈا میں ایک لڑکی نے 21دن کھانے کے بغیر گزارے اور صرف چائے، پانی اور انگوروں کے جوس پر اکتفا کرتی رہی۔ اکیس دن بعد اس کے جسم میں ایسی تبدیلیاں رونما ہو گئیں کہ جان کر آپ دنگ رہ جائیں گے۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق 27سالہ مصنفہ الینا کیٹلر نامی یہ لڑکی دن میں 14سے 18گھنٹے بالکل بھوکی پیاسی رہتی اور باقی وقت میں چائے، پانی اور جوس استعمال کرتی۔ ان اکیس دنوں میں حیران کن طور پر اس کے وزن میں 7کلوگرام کی کمی واقعی ہوئی، اس کے جسم پر جوکیل مہاسے اور دانے وغیرہ تھے، ان سے اسے نجات مل گئی اور اس کے جسم کے اندر موجود خطرناک بیکٹیریا کا بھی خاتمہ ہو گیا۔

’یہ ایک کام چھوڑ کر میں نے 95کلو وزن کم کرلیا‘

بھوکے رہنے کے اس عمل کا نام ’ماسٹرفاسٹ سسٹم‘ ہے جو کینیڈا ہی کی ماہر صحت لیوگی ڈی سیریو نے ترتیب دیا ہے۔ اس کی ہدایت کے مطابق 40سے 108دن تک اس عمل کو جاری رکھنا چاہیے تاہم الینا نے اس عمل کے ذریعے 21دن میں ہی حیران کن نتائج حاصل کر لیے۔الینا کا کہنا تھا کہ ”40سے 108دن تک اس عمل کو جاری رکھنا میرے لیے مشکل تھا چنانچہ میں نے 21دن بعد ہی اسے ترک کر دیا۔ ان اکیس دنوں میں ہی مجھے خطرناک بیماریاں پیدا کرنے والے جراثیموں سے چھٹکارہ مل گیا۔ میرے نظام انہضام کو بہت زیادہ آرام مل گیا اور میں نے کیل مہاسوں سمیت اپنی صحت کے کئی مسائل پر قابو پا لیا۔ دو سال قبل مجھ میں ’کینڈیڈا‘نامی بیماری کی تشخیص ہوئی تھی۔ اس عمل سے اس کی علامات بھی ختم ہو گئی ہیں۔میرا یہ تجربہ انتہائی حیران کن اور خوشگوار رہا ہے۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس