برطانوی خاتون نے نقاب سے منع کرنے پر سکول انتظامیہ پر مقدمہ کردیا

برطانوی خاتون نے نقاب سے منع کرنے پر سکول انتظامیہ پر مقدمہ کردیا
برطانوی خاتون نے نقاب سے منع کرنے پر سکول انتظامیہ پر مقدمہ کردیا

  

لندن(صباح نیوز)برطانوی دارالحکومت میں مسلمان خاتون نے نقاب پہننے سے منع کرنے پر بیٹی کے سکول کی انتظامیہ پر مقدمہ کردیا ہے۔ راشدہ سروغ کو ان کی بیٹی کے سکول کی تقریب میں انتظامیہ نے نقاب پہننے سے روکا تھا ۔

مصری سکیورٹی فورسز کا زمینی اور فضائی کارروائیوں میں 30مشتبہ عسکریت پسندوں کو ہلاک کرنے کا دعویٰ

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق راشدہ سروغ نے اپنی بیٹی کے ہولینڈ پارک سکول لندن کی انتظامیہ کے خلاف امتیازی سلوک کا کیس دائر کردیا ہے رپورٹ کے مطابق سکول میں نئے طلبہ کے والدین کے اعزاز میں تقریب ہوئی تھی اس تقریب میں باحجاب خاتون راشدہ نے بھی شرکت کی تھی لیکن سکول انتظامیہ نے انہیں نقاب اتارنے کا حکم دیا تھا۔ انتظامیہ کی طرف سے بتایا گیا کہ سکول میں نقاب پہننے کی اجازت نہیں بصورت دیگر وہ واپس چلی جائیں۔راشدہ کے مطابق انہیں اس حکم سے شدید صدمہ پہنچا۔ انہوں نے بتایا کہ نقاب پہننے پر لندن کی گلیوں میں لوگوں نے انہیں برا بھلا بھی کہا ہے اور گالیاں بھی دی ہیں لیکن سکول میں پڑھے لکھے اور خود کو مہذب کہنے والے افراد کے رویے پر انہیں زیادہ افسوس ہوا جس کی وجہ سے انہوں نے قانونی چارہ جوئی کا فیصلہ کیا ہے۔

مزید : بین الاقوامی