’میں دن کے اس وقت کچھ نہیں کھاتی تھی جس کی وجہ سے اتنی موٹی ہوگئی، یہ عادت چھوڑی تو 55کلو وزن کم کر ڈالا ‘ آپ بھی جانئے اور یہ غلطی کبھی نہ کریں

’میں دن کے اس وقت کچھ نہیں کھاتی تھی جس کی وجہ سے اتنی موٹی ہوگئی، یہ عادت ...
’میں دن کے اس وقت کچھ نہیں کھاتی تھی جس کی وجہ سے اتنی موٹی ہوگئی، یہ عادت چھوڑی تو 55کلو وزن کم کر ڈالا ‘ آپ بھی جانئے اور یہ غلطی کبھی نہ کریں

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اوٹاوا (نیوز ڈیسک) وزن کم کرنے کیلئے سب سے عام استعمال ہونے والا حربہ خود کو بھوکا رکھنا ہے ، لیکن آپ یہ جان کر حیران ہوں گے کہ لمبی بھوک برداشت کرنے کا کوئی فائدہ نہیں کیونکہ اس کا نتیجہ وزن میں کمی کی بجائے اضافے کی صورت میں سامنے آتا ہے۔ا گر آپ کو یقین نہ آئے تو کینیڈا سے تعلق رکھنے والی خاتون جیسیکا کیسلز سے سنئے کہ ان کےس ساتھ کیا ماجرا پیش آیا۔ 

میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق جیسیکا بتاتی ہیں کہ وہ اپنے بڑھتے ہوئے وزن کے بارے میں فکرمند تھیں لہٰذا صبح کا ناشتہ بہت کم اور دوپہر کا کھانا تقریباً ختم کر دیا۔ وہ سارا دن کچھ نہیں کھاتی تھیں اور رات تک بھوکی رہتی تھیں۔ جیسیکا کا کہنا ہے کہ دن بھر بھوکا رہنے کے بعد جب وہ رات کے وقت کھانے کی میز پر بیٹھتی تھیں تو ان کیلئے خود پر قابو رکھنا مشکل ہوجاتا تھا۔ وہ اکثر دن بھر کی بھوک برداشت کرنے کے بعد رات کے کھانے میں چکنائی سے بھرپور غذاﺅں کی بڑی مقدار کھاجاتی تھیں۔ ایک عرصے تک یہ معمول جاری رہنے کا نتیجہ یہ ہوا کہ ان کا وزن بڑھتے بڑھتے 115 کلو گرام تک جاپہنچا۔

جیسیکا کا کہنا ہے کہ ان کا وزن ایسا بے قابوہورہا تھا کہ انہیں جسم سے چربی نکلوانے کیلئے آپریشن کروانا پڑا، جس کے بعد انہوں نے ڈاکٹر کے مشورے سے کھانے پینے کا معمول مکمل طور پر بدل دیا۔ جیسیکا نے بتایا ”اگرچہ لوگوں کو یہ بات مذاق لگتی ہے لیکن دراصل میرا وزن بھوکے رہنے کی وجہ سے بڑھا۔ میں عام طور پر صبح کا آغاز بہت ہلکے پھلکے کھانے یا اکثر صرف کافی سے کرتی تھی۔ ڈنر کے وقت تک میری بھوک کا یہ حال ہوچکا ہوتا تھا کہ مجھے کچھ خبر نہیں رہتی تھی کہ میں کیا کچھ کھارہی ہوتی تھی۔ چربی نکلوانے کے لئے میں نے آپریشن کروایا اور اس کے بعد ڈاکٹر کے مشورے سے ہر قسم کی غذائیں مناسب وقفوں کے ساتھ اور مناسب مقدار میں کھانا شروع کردیں۔ اب میں مناسب ناشتہ بھی کرتی تھی، دوپہر کے وقت بھی کھانا کھاتی تھی اور رات کو بھی لیکن یہ خیال ضرور رکھتی تھی کہ میری غذا سادہ ہو اور اس میں زیادہ تر سبزیاں اور پھل ہوں۔

میں باقاعدگی سے ورزش بھی کرتی رہی اور میری مسلسل محنت کا نتیجہ یہ ہوا کہ بالآخر میں نے اپنے وزن میں تقریباً 60کلوگرام کی کمی کرلی۔ اب میں اتنی سمارٹ ہوگئی ہوں کہ مجھے دیکھنے والے حیران رہ جاتے ہیں۔ میں موٹاپے سے پریشان لوگوں کو بتانا چاہتی ہوں کہ وزن کم کرنے کیلئے بھوکے رہنا دانشمندی نہیں ہے ۔ طویل وقت تک بھوک برداشت کرنے کے نتیجے میں بالآخر آپ اپنی ضرورت سے کہیں زیادہ کھا بیٹھتے ہیں۔ آپ مناسب وقفوں سے کھانا کھائیں لیکن اپنی غذا کو سادہ اور صحت بخش رکھیں، اور ہاں باقاعدگی سے ورزش کرنا مت بھولیں۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس