متنازع بیان، رانا ثناء اللہ کیخلاف درخواست پر ایس ایچ او سے جواب طلب

متنازع بیان، رانا ثناء اللہ کیخلاف درخواست پر ایس ایچ او سے جواب طلب

  

لاہور(نامہ نگار)سیشن عدالت نے متنازع بیان دینے پرسابق صوبائی وزیر قانون رانا ثناء اللہ کے خلاف اندراج مقدمہ کی درخواست پر تھانہ سول لائنز کے ایس ایچ او سے آئندہ سماعت پر جواب طلب کر لیا،شہریوں کو عدلیہ کے خلاف بھڑکانے پر خواجہ سعد رفیق کے خلاف اندراج مقدمہ کی درخواست کی سماعت 8اگست تک ملتوی۔تفصیلات کے مطابق عدالت کے روبرو مقامی شہری ایوب اعوان کے وکیل اظہر صدیق نے موقف اختیار کیا کہ رانا ثناء اللہ نے نوازشریف کے استقبال کو مبینہ طور پرحج کے برابر ثواب قرار دیا اور اسلامی شعائر کا مذاق اڑایا،انہوں نے کہا کہ رانا ثناء اللہ کے اس بیان سے عوام الناس کے مذہبی جذبات مجروع ہوئے ہیں۔رانا ثناء اللہ کا یہ بیان تعزیرات پاکستان کی دفعہ 295 (اے )کے زمرے میں آتاہے ،انہوں نے استدعا کی کہ عدالت متنازع بیان دینے پر رانا ثناء اللہ کے خلاف مقدمہ درج کرنے کا حکم دے جس پر عدالت نے تھانہ سول لائنز کے ایس ایچ او کو8اگست کے لئے نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیاہے۔علاوہ ازیں سیشن عدالت نے شہریوں کو عدلیہ کے خلاف بھڑکانے پر خواجہ سعد رفیق کے خلاف اندراج مقدمہ کی درخواست کی سماعت 8اگست تک ملتوی کرتے ہوئے تھانہ سول لائنز کے ایس ایچ او سے جواب طلب کر لیاہے۔عدالت کے روبرودرخواست گزار عبداللہ ملک کے اظہر صدیق ایڈووکیٹ نے موقف اختیار کیا کہ خواجہ سعد رفیق نے پاناماکیس کے فیصلے کے حوالے سے عدلیہ مخالف بیان بازی کی جو کہ وا ضح طور پر توہین عدالت ہے۔خواجہ سعد رفیق نے متعدد بار عدلیہ کو بطور ادارہ تنقید کا نشانہ بنایا اور عوام کو عدلیہ کے خلاف اکسایا،انہوں نے بتایاکہ ان کی درخواست کے باجود پولیس عدلیہ مخالف بیان بازی کرنے اور شہریوں کو اکسانے پر خواجہ سعد رفیق کے خلاف کاروائی سے کترا رہی ہے،انہوں نے استدعا کی خواجہ سعد رفیق کے خلاف مقدمہ درج کرنے کا حکم دیا جائے جس پر عدالت نے تھانہ سول لائنز کے ایس ایچ او کو8اگست کے لئے نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیاہے۔

جواب طلب

مزید :

علاقائی -