منی لانڈرنگ ،آصف زرداری فریال تالپور سمیت 20افراد مفرور قرار

منی لانڈرنگ ،آصف زرداری فریال تالپور سمیت 20افراد مفرور قرار

  

کراچی(سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک ، نیوز ایجنسیاں ) وفاقی تحقیقاتی ایجنسی (ایف آئی اے) نے حسین لوائی و دیگر کیخلاف مقدمے کے چالان میں سابق صدر آصف علی زرداری اور ان کی بہن فریال تالپور کو مفرور ملزم قرار دیدیا۔ایف آئی اے نے اربوں روپے کے منی لانڈرنگ کے مقدمے کا عبوری چالان سیشن جج جنوبی کی عدالت میں جمع کرایا۔ایف آئی اے نے نجی بینک کے چیئرمین حسین لوائی سمیت مجموعی طور پر 20 افراد کو مفرور قرار دیاہے اس فہرست میں سابق صدر آصف زرداری اور ان کی بہن فریال تالپور کا نام 19 اور 20 ویں نمبر پر ہے۔حسین لوائی و دیگر کیخلاف درج مقدمے میں مفرور ملزمان میں انور مجید اور ان کے بیٹے کا نام بھی شامل ہے۔ایف آئی اے حسین لو ا ئی سمیت 32 افراد کیخلاف بینامی اکاؤنٹس کی تحقیقات کررہی ہے۔ ان اکاؤنٹس کے ذریعے مبینہ طور پر اربوں روپے کی ٹرانسیکشنز ہوئیں ہیں۔ایف آئی اے ذرائع بتاتے ہیں یہ اکاؤنٹس 2014 میں چند ماہ کیلئے کھولے گئے تھے، ان اکاؤنٹس کی تحقیقات 2015 میں شروع ہوئی تھی تاہم دباؤ کے باعث ایف آئی اے نے یہ تحقیقات روک دی تھیں۔ ایک دوسرے بینک کے اکاؤنٹ میں ایکویٹی کی خاطر اربوں روپے بھی بھیجے گئے، بینک اکاؤنٹس مختلف لوگوں کے نام پر جعلی کاغذات پر کھولے گئے، ان افراد سے جب تحقیقات ہوئی تو انہوں نے ان اکاؤنٹس سے لاتعلقی ظاہر کی۔ حسین لوائی اور دیگر ملزمان نے 3بینکوں کے 29جعلی اکانٹس کے ذریعے 35ارب روپے کی منی لانڈرنگ کی۔حسین لوائی آصف زرداری کے قریبی ساتھی اورایف آئی اے نے حسین لوائی کیخلاف ایف آئی آر میں بڑی سیاسی اور کاروباری شخصیا ت کیساتھ ساتھ آصف زرداری اور فریال تالپور کی کمپنی کا تذکرہ بھی کیا ہے۔ مقدمے کے متن کے مطابق آصف زرداری اور فریال تالپور کی کمپنی بھی منی لانڈرنگ سے فائدہ اٹھانے والوں میں شامل ہے، زرداری گروپ نے ڈیڑھ کروڑ روپے کی منی لانڈرنگ کی رقم وصول کی۔

زرداری ، فریال

مزید :

صفحہ اول -